موبائل فون کا 5 گھنٹے سے زائد کا استعمال نقصان دہ قرار

ہانگ کانگ : سمارٹ فون کی بدلتی دنیا میں اہن ترین ضرورت بن چکا ہے، لیکن اس کے بہت سے فوائد کے ساتھ چند نقصانات بھی ہیں ،تحقیق سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ 5 گھنٹے موبائل فون کے مسلسل استعمال سے انگلیوں کی رگیں متاثر ہوتی ہے جس سے ہاتھوں اور انگلیوں میں درد کی شکایت پیدا ہوتی ہے۔

موبائل فون کا 5 گھنٹے سے زائد کا استعمال نقصان دہ قرار

ہانگ کانگ : سمارٹ فون کی بدلتی دنیا میں اہن ترین ضرورت بن چکا ہے، لیکن اس کے بہت سے فوائد کے ساتھ چند نقصانات بھی ہیں ،تحقیق سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ 5 گھنٹے موبائل فون کے مسلسل استعمال سے انگلیوں کی رگیں متاثر ہوتی ہے جس سے ہاتھوں اور انگلیوں میں درد کی شکایت پیدا ہوتی ہے۔


ہانگ کانگ کی پولی ٹیکنیکل یونیورسٹی میں ہونے والی تحقیق سے پتا چلا ہے کہ فون کا زیادہ اور مسلسل استعمال ہاتھوں اور کلائیوں سمیت انگلیوں میں درد کی وجہ بنتا ہے۔تحقیق میں الٹرا ساونڈ کے ذریعے الیکٹرانک آلات کے 5 یا اس سے زائد گھنٹوں استعمال کے اندرونی نقصانات بھی دیکھے گئے۔

تحقیق کے دوران کارپل ٹیونل سنڈروم یعنیانگلیوں اور کلائیوں کی تکلیف کی شکایت ان لوگوں میں زیادہ دیکھی گئی جو نہ صرف موبائل فون، ٹیبلٹ یا کی بورڈ کا استعمال زیادہ کرتے ہیں بلکہ ایک ہاتھ سے موبائل فون چلانے والوں میں یہ شکایت زیادہ ہوتی ہے۔تحقیق میں الٹراساو¿نڈ سے پتا چلا کہ جو لوگ 5 گھنٹے یا اس سے زائد مسلسل ان چیزوں کا استعمال کرتے ہیں ان کے ہاتھوں کی رگیں بھی چپٹی ہوگئیں کیونکہ انگلیوں کی مسلسل حرکات سے نسوں پر دباو پڑتا ہے جس سے اس طرح کی تکلیف سامنے آتی ہے۔

ماہرین کا کہنا تھا کہ ان جدید آلات کا ڈیزائن ہمیں بار بار اپنی انگلیاں استعمال کرنے پر مجبور کرتا ہے اور اس حرکت کی وجہ سے انگلیوں پر دباو¿ پڑتا ہے جس سے نسیں کھنچتی ہیں اور ہاتھوں میں تکلیف شروع ہوتی ہے۔تحقیق میں 7 سال جیسے کم عمر کے بچوں کو بھی ٹیکسٹ نیک کا شکاردیکھا گیا کیونکہ بچے مسلسل فون اور ٹیب لیٹ کا استعمال کرتے ہیں۔