عام انتخابات 2018 ءکو ملتوی کرنے کی تینوں درخواستوں کو الیکشن کمیشن نے مسترد کردیا

عام انتخابات 2018 ءکو ملتوی کرنے کی تینوں درخواستوں کو الیکشن کمیشن نے مسترد کردیا

فائل فوٹو

اسلام آباد: عام انتخابات 2018 ءکو ملتوی کرنے کی تینوں درخواستوں کو الیکشن کمیشن نے مسترد کردیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق چیف الیکشن کمشنر کی سربراہی میں عام انتخابات ملتوی کرنے سے متعلق درخواستوں پر سماعت ہوئی جس میں وکیل کامران مرتضیٰ نے اپنے دلائل میں کہا کہ الیکشن میں تاخیر نہیں چاہتے، ملک میں الیکشن ایک ہی دن کرائے جائیں۔

یہ بھی پڑھیں:آج 'گرے لسٹ' میں پاکستان کے نام کے معاملے پر جائزے کا امکان

ان کا کہنا تھاکہ اگر بغیر بحث کے آئینی ترمیم ہوگی تو ایسے ہی مسائل پیدا ہوں گے، فاٹا والوں کا ایک آئینی حق ہے کہ وہ اپنے نمائندوں کومنتخب کریں۔کامران مرتضیٰ نے کہا کہ ایک دن الیکشن کرانےکا مقصد یہ ہےکہ کوئی اثر انداز نہ ہو لیکن ضمنی انتخاب کی مثالیں موجودہیں جس کی حکومت ہو وہی ضمنی انتخاب جیتتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں:ترک الیکشن میں طیب اردوان نے ایک اور بار میدان مار لیا

اس موقع پر الیکشن کمیشن کی ممبر کے پی کے مسز ارشاد قیصر نے کہا کہ فاٹا کی قومی اسمبلی کی نشستوں پر انتخاب ہونے جارہا ہے۔چیف الیکشن کمشنر نے کہا کہ فاٹا میں نئی حلقہ بندیاں ہوئیں ہیں، فاٹا اور اسلام آباد کی ایک حلقہ بندی کمیٹی تشکیل دی تھی۔الیکشن کمیشن نے دلائل سننے کے بعدعام انتخابات ملتوی کرنے کی تینوں درخواستوں کو مسترد کردیا۔

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں