ایران پر اسلحہ کی خریداری پر عائد پابندی برقرار رہنی چاہیے: پومپیو

ایران پر اسلحہ کی خریداری پر عائد پابندی برقرار رہنی چاہیے: پومپیو

واشنگٹن:امریکی وزیرخارجہ مائیک پومپیو نے کہا ہے کہ امریکہ ایران کو اسلحہ کے حصول پرعاید پابندی میں توسیع کے لیے کام کررہا ہے۔ خیال رہے کہ ایران پر عالمی سطح پر اسلحہ اور جنگی ہتھیاروں کے حصول پرپابندی کی مدت آئندہ اکتوبر میں ختم ہو رہی ہے۔

تفصیلات کے مطابق ایک پریس کانفرنس سے خطاب میں امریکی وزیرخارجہ نے کہا کہ ایران پر اسلحہ کے حصول پر عاید کی گئی پابندی کا خاتمہ دہشت گرد ملیشیاﺅں کے لیے اچھی خبر ہوگی کیونکہ ایرانی وہ اسلحہ اپنے وفادار دہشت گرد عناصر کو فراہم کرے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ ایران کو دہشت گردی کے لیے فنڈز فراہم کرنے کی تجویز ناقابل قبول ہے۔انہوں نے کہا کہ پوری دنیا کو یہ جان لینا چاہیے کہ ایران کو اسلحہ کی فراہمی کے خطرناک نتائج کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ مناسب وقت آنے پر امریکا ایران کے ساتھ بات چیت کرے گا مگر ایران کو اسلحہ کے حصول میں کسی قسم کی ڈھیل نہیں دی جاسکتی۔

امریکی وزیر خارجہ نے کہا ہےکہ وہ اپنے اتحادیوں اور دوست ممالک کے ساتھ ایران کو اسلحہ کی فراہمی پرعاید کردہ پابندی میں توسیع کے لیے صلاح مشورہ کررہے ہیں۔

امریکی وزیرخارجہ نے کہا کہ ایران ایک بدمعاش ریاست ہے جو عالمی جوہری توانائی ایجنسی کے معائنہ کاروں کو اپنی مشکوک جوہری تنصیبات تک رسائی دینے سے مسلسل انکار کرکے ہٹ دھرمی کا مظاہرہ کررہا ہے۔ انہوں نے ایران پر زور دیا کہ وہ بدمعاشی چھوڑ کر جوہری توانائی ایجنسی کے ساتھ تعاون کرے۔