سعودی عرب میں اس مرتبہ 29 روزے ہو نے کا امکان ہے ،سعودی ماہر فلکیات

سعودی عرب میں اس مرتبہ 29 روزے ہو نے کا امکان ہے ،سعودی ماہر فلکیات

جدہ : سعودی عرب میں بہت کم ہے کہ رمضان المبار ک کے آغاز اور اختتام پر کوئی مسلہ پیدا ہوا ہو۔ چاند کی رویت کے مطابق سعودی عرب میں روزوں کے اوقات اور دنوں کا تعین ہر سال اچھی طرح شروع اور اختتام پذیر ہوتاہے.


اس بار رمضان المبارک کے بارے میں سعودی  ماہر فلکیات نے پیش گوئی کی ہے کہ رمضان المبارک کا مہینہ ہفتے سے شروع ہو گا اور اس مرتبہ 29 روزے ہونگے ۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق سعودی ماہر فلکیات ڈاکٹر خالد الزاقانے ٹویٹر پرپیغام میں کہنا ہے کہ رمضان المبارک کا مہینہ ہفتے سے شروع ہو گا اور اس مرتبہ 29 روزے ہوں گے۔

ان کے مطابق رواں سال رمضان المبارک کا اختتام بھی ہفتے کے روز ہی ہو گا اور پورے مہینے میں کل 4 جمعہ آئیں گے۔ انہوں نے کہا کہ رمضان المبارک کے آخری عشرے میں روزے کا دورانیہ زیادہ ہو گا۔ ان کے مطابق سب سے طویل روزہ طریف میں جبکہ کم طوالت کا روزہ جازان  میں ہو گا۔

انہوں نے مزید کہا کہ رمضان المبارک کے آٹھویں روز سے گرم ترین دنوں کا بھی آغاز ہو جائے گا اور گرمی کی شدت 40 روز تک برقرار رہے گی