لاہورمیں قاتل سرگرم، سات روز میں 12 افراد کاقتل،شہریوں میں خوف و ہراس

لاہورمیں قاتل سرگرم، سات روز میں 12 افراد کاقتل،شہریوں میں خوف و ہراس

لاہور :شہرمیں قاتل  سرگرم،شہریوں میں خوف وہراس پھیل گیا۔ سات روز میں 12 افراد کو موت کے گھاٹ اتار دیا گیا ، حکام صرف نوٹسز لیتے رہے۔خادم اعلیٰ کی ڈید لائن بھی کام نہ آئی،پولیس ایک بھی کیس کو حل نہیں کر سکی .تفصیلات کے مطابق 19 نومبر کو ملت پارک میں ڈاکووں نے باپ بیٹے سمیت پانچ افراد کو موت کے گھاٹ اتار دیا تھا ۔  اگلے ہی دن بھاٹی گیٹ میں ٹارگٹ کلرز نے گھر کے گیٹ پر کھڑے سید فخر کو قتل کر دیا ۔ پھر بھی پولیس کے کان کھڑے نہ ہوئے۔21 نومبر کو ساندہ میں قاتلوں نے امیتاز نامی شخص کو بھی گھر کے اندر گھس کر موت کی نیند سلا دیا۔ مسلم ٹاون میں 65 سالہ نامعلوم شخص کو قتل کر کے لاش سڑک پر پھینک دی گئی ، شہر کے پوش علاقے بھی محفوظ نہ رہے ۔


ڈیفنس سی میں گھر کے اندر بے دردی سے قتل کیا گیا ۔باغبانپورہ میں قاتل موت بانٹتے رہے ۔ ایک ہی دن اکبر اور شیر داد خان کوموت کی وادی میں بھیج دیا۔باغبان پورہ میں اداکارہ قسمت بیگ کو سرعام شناخت کے بعد شدید فائرنگ کرکے قتل کردیا۔ قاتلوں کو آزادانہ نقل حرکت اور پولیس کی کارروائی نہ کرنے پر شہر میں خوف کا ماحول ہے۔

نیوویب ڈیسک< News Source