عراق میں اکتوبر سے جاری احتجاج میں ہلاکتوں کی تعداد 350 ہو گئی

عراق میں اکتوبر سے جاری احتجاج میں ہلاکتوں کی تعداد 350 ہو گئی
سیکیورٹی فورسز کے ساتھ تازہ جھڑپوں میں 6 مظاہرین ہلاک اور درجنوں کی تعداد میں زخمی ہوئے ہیں۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔فوٹو/ بشکریہ رائٹرز

بغداد: عراق میں گزشتہ ماہ سے جاری حکومت مخالف احتجاج کے دوران سیکیورٹی فورسز سے جھڑپوں اور پرتشدد مظاہروں میں ہلاکتوں کی تعداد 350 ہو چکی ہے جبکہ ہزاروں افراد زخمی ہوئے ہیں۔


عرب میڈیا کے مطابق عراق میں رواں سال یکم اکتوبر سے  بدعنوانی، بیروزگاری اور بنیادی سہولیات کی عدم فراہمی پر حکومت مخالف احتجاج کا سلسلہ جاری ہے۔

جنوبی عراق میں ہونے والے مظاہروں اور سیکیورٹی فورسز کے ساتھ تازہ جھڑپوں میں 6 مظاہرین ہلاک اور درجنوں کی تعداد میں زخمی ہوئے ہیں۔

جنوبی عراق کے شہر ناصریہ میں سیکیورٹی فورسز کی فائرنگ سے 3 مظاہرین ہلاک اور 47 زخمی ہوئے جب کہ بصرہ کے جنوبی علاقے ام قصر میں سیکیورٹی فورسز سے جھڑپوں میں 3 مظاہرین ہلاک اور 50 سے زائد زخمی ہوئے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق مظاہرین نے ناصریہ شہر میں دریائے فرات پر 5 پل بند کر دیے جسے خالی کرانے کے لیے انتظامیہ کی جانب سے کوششیں کی جا رہی ہیں۔

واضح رہے کہ عراق میں گزشتہ ماہ سے جاری احتجاج میں سیکیورٹی فورسز کے کریک ڈاؤن کے باعث اب تک 350  افراد مارے جا چکے ہیں۔