او آئی سی اجلاس میں مقبوضہ کشمیر میں ظلم و بربریت پر آواز اٹھائیں گے: وزیر خارجہ

Pakistan raise voice in OIC on atrocities in occupied Kashmir: Foreign Minister
وزیر خارجہ کا او آئی سی کونسل آف فارن منسٹرز اجلاس سے قبل ویڈیو پیغام: فائل فوٹو

اسلام آباد: وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں بھارت کی انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیاں بڑھتی جا رہی ہیں۔ او آئی سی مقبوضہ کشمیر میں ظلم و بربریت پر آواز اٹھانے کیلئے ایک مناسب فورم ہے۔

تفصیل کے مطابق وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے اپنے ویڈیو پیغام میں کہا ہے کہ میں میں او آئی سی کی کونسل آف فارن منسٹرز کے سہ روزہ اجلاس میں شرکت کیلئے نائیجر جا رہا ہوں۔ اس سہ روزہ کانفرنس میں او آئی سی ممبر ممالک کے وزرائے خارجہ کی اہم نشست ہوگی۔شاہ محمود قریشی نے بتایا کہ میں سہ روزہ کانفرنس میں شرکت کرکے پاکستان کی بھرپور نمائندگی کروں گا۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا اپنے پیغام میں کہنا تھا کہ اسلاموفوبیا سے متعلق پاکستان سمیت پوری دنیا کے مسلمان تذبذب کا شکار ہیں۔ پاکستان کا اسلاموفوبیا سے متعلق بہت واضح اور ٹھوس موقف رہا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ امریکا اور مشرق وسطیٰ میں ہونےوالی تبدیلیوں پر گفتگو اور پاکستان کا موقف پیش کرنے کا موقع ملے گا۔ کانفرنس میں امت مسلمہ کو درپیش چیلنجز اور اہم معاملات پر تبادلہ خیال کیا جائے گا۔ او آئی سی اجلاس میں وزیراعظم اور پاکستانی عوام کا نکتہ نظر پیش کرنے کا موقع ملے گا۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ مقبوضہ کشمیر میں بھارت کی انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیاں بڑھتی جا رہی ہیں۔ دہشت گردی کی بھارتی پشت پناہی کے ٹھوس شواہد بھی پیش کر چکے ہیں۔ مقبوضہ کشمیر میں ظلم و بربریت پر آواز اٹھانے کیلئے یہ ایک مناسب فورم ہے۔

انہوں نے کہا کہ مقبوضہ جموں کشمیر سے متعلق او آئی سی کی بہت سی قراردادیں موجود ہیں۔ اجلاس کو کشمیر کی تازہ صورتحال سے آگاہ کرنا میرے فرائض میں شامل ہے۔ کانفرنس میں مسئلہ کشمیر اور فلسطین پر دیگر وزرائے خارجہ سے تبادلہ خیال کا موقع ملے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ او آئی سی کے اس اجلاس میں کچھ قراردادیں پیش کرنے کا ارادہ ہے۔ اہم منصوبوں پر دو طرفہ ملاقاتوں اور پاکستان کا موقف پیش کرنے کا موقع بھی ملے گا۔