کابل : افغانستان ایک خاص چیز کی اسمگلنگ کے لیے پاکستان کاراستہ استعمال کر رہا ہے،افغانستان میں گذشتہ سال کے مقابلے میں اس سال پوست کی ریکارڈ فصل کاٹی گئی ہے۔ حکام کا کہنا ہے کہ یہ بات دہشت گردی اور منظم جرائم سے لڑائی کے سلسلے میں ایک بری خبر ہے۔افغانستان کے وزیر برائے انسداد ِمنشیات، سلامت عظیمی نے امریکی نشریاتی ادارے سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ عدم استحکام کے حالات کے باعث حکومت پوست کو تلف کرنے کے پروگرام پر عمل درآمد نہ کرا سکی۔

جس وجہ سے منافع بخش فصل کی پیداوار میں 64 فی صد کا اضافہ دیکھا گیا اور اس وقت یہ فصل 3 لاکھ 40 ہزار ہیکٹر پر کاشت کی گئی ہے۔عظیمی کے پیش رو، جنرل خدائے داد ہزارہ کا کہنا ہے کہ حکومت کی بدعنوانی اور کمزوریاں اس سلسلے میں معاون عناصر بنے جسے ا±نھوں نے ملک میں منشیات کی سونامی کا بحران قرار دیا۔

طالبان اور دیگر شدت پسند گروہوں کی جانب سے انتظامیہ کو عدم استحکام کا شکار کرنے کی کوششوں کے نتیجے میں انھوں نے مزید زمین ہتھیا لی ہے، اور اپنے عزائم کے فروغ کے لیے پوست کی کاشت میں اضافہ کر دیا ہے۔

گذشتہ برس، پوست کی پیداوار 201000 ہیکٹر پر کی گئی، جس سے 4700 ٹن افیون پیدا ہوا، جس میں 2015ء کے مقابلے میں 46 فی صد تک کا اضافہ آیا۔انہوں نے کہا کہ گذشتہ سال کے مقابلے میں، اس سال دس ہزار ٹن زیادہ افیون پیدا ہوا۔واضح رہے کہ افیون میں سے ہیروئن بنتی ہے۔