ریاض : سعودی عرب نے خواتین کا بڑا خواب پورا کردیا، سعودی عرب کے 87ویں قومی دن کے موقع پر اسٹیڈیم میں منعقدہ تقریبات میں شرکت کے لیے خواتین کو پہلی مرتبہ اسٹیڈیم میں آنے کی اجازت دے دی گئی۔گذشتہ روز سعودی عرب میں قومی دن کے سلسلے میں دارالحکومت ریاض میں کنگ فہد انٹرنیشنل اسٹیڈیم سمیت پورے ملک میں تقریبات منعقد ہوئیں جن کا مقصد قومی جوش و جذبے کو بڑھانا تھا۔

بحیرہ احمر کے ساحلوں پر واقع شہر جدہ میں ایک میوزیکل کنسرٹ منعقد کیا گیا جن میں سعودی عرب کے 11 موسیقاروں نے شرکت کی جبکہ اس موقع پر روایتی رقص کا مظاہرہ کیا گیا اور علاقے میں شاندار آتش بازی بھی کی گئی۔عوام کو تفریح فراہم کرنے کے لیے حکومت کے تعاون سے ہونے والی حالیہ تقریبات سعودی حکومت کے اصلاحاتی پروگرام ’وڑن 2030 ‘ کے تحت تھیں۔

سعودی حکومت کے اصلاحات پروگرام وڑن 2030 کا مقصد ملکی معیشت کا تیل پر انحصار کے بجائے دوسرے ذرائع ا?مدن تلاش کرنا اور نوجوان نسل کی زندگیوں کو آسان بنانا ہے۔

تقریبات کے دوران دارالحکومت ریاض میں سعودی پرچم اور بل بورڈز موجود تھے جن پر سعودی فرماںروا شاہ سلمان اور سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کی تصویریں آویزاں تھیں۔اسکے علاوہ سعودی عرب میں یومِ آزادی کا جشن منانے کے لیے بلند و بالا عمارتوں کو سبز رنگ کی برقی روشنیوں سے بھی سجایا گیا تھا۔