اپوزیشن صرف تنقید نہ کرے، بحران سے نکلنے کا راستہ بھی بتائے، فواد چوہدری

اپوزیشن صرف تنقید نہ کرے، بحران سے نکلنے کا راستہ بھی بتائے، فواد چوہدری

اسلام آباد: ن لیگ اور پیپلز پارٹی کی حکومتوں نے پاکستان کے ساتھ اچھا نہیں کیا، اپوزیشن صرف تنقید نہ کریں، بحران سے نکلنے کا راستہ بھی بتائیں، کیا ملکی قرضوں میں اضافے کی ذمہ دار نئی حکومت ہے۔


تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر اطلاعات نے قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا  کہ ن لیگ کی سابق حکومت میں بے شمار ارسطو شامل تھے، ن لیگ کی حکومت نے ایسٹ انڈیا جیسا کردار ادا کیا، اب ہمیں کہا جا رہا ہے کہ وفاقی وزیر نئے ہیں، انہیں کوئی تجربہ نہیں ہے، سابق حکومت نے آنیوالی نسلوں کو بھی مقروض کر دیا۔

انہوں نے کہا  کہ ن لیگ اور پیپلزپارٹی کی حکومتوں نے پاکستان کے ساتھ اچھا نہیں کیا، زرمبادلہ کے ذخائر صرف ڈیڑھ ماہ کے رہ گئے ہیں، کیا قرضوں کی ذمہ دار 21 دن کی حکومت ہے؟ ن لیگ اور پیپلزپارٹی صرف تنقید نہ کرے، بحران کا حل بھی بتائے، اپوزیشن لیڈر ہی ذمہ داروں کا تعین کر دیں۔

انہوں نے کہا کہ اسحاق ڈار اینڈ کمپنی   معیشت کے ذمہ دار ہیں، قرضوں کی وجہ سے امیر امیر تر اور غریب غریب تر ہوتا جا رہا ہے، مسلم لیگ ن کی حکومت میں خسارہ 5 گنا بڑھا، سابق حکومتوں نے آنے والی نسلوں کو مقروض کر دیا۔

انہوں نے کہا پنجاب حکومت کو میٹرو بس چلانے کیلئے 8 ارب روپے چاہئیں، آج چند لوگ ارب پتی ہو گئے  جن کے ایون فیلڈ میں فلیٹس ہیں، اسحاق ڈار کو جہاز میں بٹھا کر باہر بھجوایا گیا اور وہ واپس نہیں آئے۔

انہوں  نے کہا کہ  خزانے میں پیسہ نہیں، کیا کریں، کیا مزید قرض لیں ؟ 11 ارب روپے صرف شہباز شریف نے خرچ کیے، جس محکمے پر ہاتھ رکھیں پتہ چلتا ہے وہ تباہ ہے، گزشتہ حکومت نے قرضے لیکر کھلونے بنائے، میٹرو ٹرین چلانے کیلئے ہر سال 20 ارب روپے درکار ہیں۔