بختاوراورآصفہ بھٹو زرداری نے عرفان اللہ مروت کو پارٹی میں شامل کئے جانے کی شدید مخالفت کی

کراچی:  بختاوراورآصفہ بھٹو زرداری اپنے والد آصف علی زرداری کے فیصلے کے خلاف کھڑی ہوگئیں اوردونوں بہنوں نے عرفان اللہ مروت کو پارٹی میں شامل کئے جانے کی شدید مخالفت کی ہے۔

مسلم لیگ (ن) کو خیرباد کہنے والے عرفان اللہ مروت نے گزشتہ روز آصف علی زرداری سے ملاقات کے بعد پیپلزپارٹی میں شمولیت کا اعلان کیا تھا جس پر بختاوراورآصف بھٹو زرداری نے شدید ناراضگی کا اظہار کیا ہے۔ سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنی ٹوئٹ میں بختاوربھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ ذہنی بیمارشخص کو  جیل میں سڑنا چاہیئے اور ایسے شخص کو پیپلزپارٹی میں شامل نہیں ہونا چاہیئے۔ بختاور کا کہنا تھا کہ ایسی جماعت جس کی قیادت ایک خاتون نے کی وہ ایسے افراد کو برداشت نہیں کرسکتی۔

آصفہ بھٹو زرداری نے عرفان اللہ مروت کے حوالے سے اپنی ٹوئٹ میں لکھا کہ خواتین کی عزت کرنا پیپلزپارٹی کی بنیادری روایت ہے اس لئے عرفان اللہ مروت کو پارٹی میں نہیں ہونا چاہیئے کیوں کہ ان کے غیرقانونی اور گھناؤنے اقدامات قابل مذمت ہیں۔