طالبان کے ساتھ بات چیت ناکام۔۔افغانستان کا مستقبل کیا ہو گا ؟؟

طالبان کے ساتھ بات چیت ناکام۔۔افغانستان کا مستقبل کیا ہو گا ؟؟

اسلام آباد: افغان حکومت اور طالبان کے درمیان امن مذاکرات ناکام ہو گئے ہیں۔

اسلام آباد میں ہونے والے مذاکرات میں طالبان نے فائر بندی کی پیشکش مسترد کر دی ہے۔ ذرائع کے مطابق، افغان طالبان کے قطر میں موجود نمائندے شہاب الدین دلاور کی قیادت میں 3 رکنی وفد نے امن مذاکرات کےلیے افغان حکومت سے رابطہ کیا مگر یہ کوشش ناکام رہی ۔ بتایا گیا ہےکہ ملا منصور نے افغان حکومت سے ملاقات منع کر دی کیونکہ ان کا کہنا تھا کہ افغان حکومت سے مطالبات منوانا بے سود ہوگا۔

پاکستان کے محکمہ خارجہ کے ترجمان نے کہا ہے کہ ہم دہشت گردی کی ہر شکل میں مذمت کرتے ہیں اور چاہتےہیں کہ افغانستان اور پاکستان دونوں امن کے سائے میں رہیں ۔طالبان کو مذاکراتی میز پر لانا پاکستان کے ہی نہیں بلکہ افغانستان میں قیام امن کے سلسلے میں معاون ثابت ہو سکتا تھا لہذا اس ناکامی کی وجہ پاکستان نہیں ہے ۔

اس سے قبل یہ مذاکرات پاکستان میں ہوئے تھے تاہم دوسرے دور میں طالبان لیڈر ملا عمر کی موت کے بعد انہیں موخر کر دیا گیا تھا۔

مصنف کے بارے میں