لانگ مارچ توڑ پھوڑ کیس، پی ٹی آئی رہنماؤں کی عبوری ضمانتوں پر سماعت 5 اگست تک ملتوی

لانگ مارچ توڑ پھوڑ کیس، پی ٹی آئی رہنماؤں کی عبوری ضمانتوں پر سماعت 5 اگست تک ملتوی

لاہور: لانگ مارچ کے دوران توڑ پھوڑ کے کیس میں پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے 18 رہنماؤں کی عبوری ضمانتوں پر سماعت 5 اگست تک ملتوی کر دی گئی ہے جبکہ مقدمات میں دہشت گردی کی دفعات کو بھی چیلنج کر دیا گیا ہے۔ 

تفصیلات کے مطابق لاہور کی انسداد دہشت گردی عدالت میں پی ٹی آئی رہنماؤں کی عبوری ضمانتوں سے متعلق درخواستوں پر سماعت ہوئی اور عدالت نے وکلاءکو حتمی دلائل کیلئے آئندہ سماعت پر طلب کر لیا۔ 

دوران سماعت عدالت نے استفسار کیا کہ کیا تمام ملزمان شامل تفتیش ہو چکے ہیں؟ جس پر وکیل نے عدالت کو بتایا کہ تمام ملزمان شامل تفتیش ہو چکے ہیں۔ 

ذرائع کے مطابق پی ٹی آئی رہنماءجمشید اقبال چیمہ، حماد اظہر، یاسمین راشد، اعجاز چوہدری، میاں محمود الرشید اور اسلم اقبال و دیگر رہنماءسماعت کے موقع پرعدالت پیش ہوئے۔ 

پی ٹی آئی رہنماؤں نے دہشت گردی کی دفعات کو بھی چیلنج کر دیا ہے اور حماد اظہر و یاسمین راشد کی جانب سے دائر کی گئی درخواستوں میں لاہور کے 4 تھانوں میں درج مقدمات میں دہشت گردی کی دفعات کو چیلنج کیا گیا ہے۔ 

یہ درخواستیں پولیس اور پراسیکیوشن کو دفعات خارج کرنے کیلئے جمع کرائی گئیں جن میں استدعا کی گئی ہے کہ پی ٹی آئی رہنماؤں کے خلاف دہشت گردی کے مقدمات خارج کئے جائیں۔ 

مصنف کے بارے میں