بھارت خواتین کیلئے سب سے زیادہ خطرناک ملک قرار

بھارت خواتین کیلئے سب سے زیادہ خطرناک ملک قرار

بھات میں 2007 سے 2016 کے دوران خواتین کے خلاف جرائم میں 83 فیصد اضافہ ہوا۔۔۔فائل فوٹو

لندن: عالمی ماہرین کی رائے پر مشتمل ایک سروے میں جنسی زیادتی اور جبری مشقت کے واقعات کی بناء پر بھارت کو خواتین کے لیے سب سے زیادہ خطرناک ملک قرار دے دیا گیا۔عالمی ماہرین کی رائے پر مشتمل تھومپسن رائٹرز فاؤنڈیشن کے سروے میں جنسی تشدد، ہراساں کیے جانے اور ذہنی اور گھریلو تشدد سمیت خواتین کو درپیش مختلف قسم کے خطرات پر سوال کیے گئے۔

 

ماہرین کا کہنا ہےکہ اس فہرست میں پہلا نمبر ظاہر کرتا ہے کہ بھارت میں خواتین کے تحفظ کے لیے خاطر خواہ اقدامات نہیں کیے جا رہے۔ اس فہرست میں خواتین کے لیے افغانستان دوسرا، شام تیسرا، صومالیہ چوتھا اور سعودی عرب پانچواں خطرناک ملک قرار دیا گیا ہے جبکہ خواتین کے لیے خطرناک ملکوں میں پاکستان کا چھٹا نمبر ہے۔

 

مزید پڑھیں: بہت عرصہ پہلے ''پہلی نظر'' میں کسی سے محبت ہوئی تھی، ماہرہ

ٹاپ ٹین ملکوں میں شامل امریکا واحد مغربی ملک ہے جسے خواتین کے لیے خطرناک قرار دیا گیا ہے۔

 

حکومتی اعدادوشمار کے مطابق بھات میں 2007 سے 2016 کے دوران خواتین کے خلاف جرائم میں 83 فیصد اضافہ ہوا ہے جہاں ہر گھنٹے میں جنسی زیادتی کے 4 کیسز ہوتے ہیں۔

 

اسی طرح بھارت میں کام کی جگہوں پر بھی جنسی ہراساں کیے جانے کے واقعات میں 170 فیصد اضافہ ہوا ہے۔ خبر رساں ادارے رائٹرز کے مطابق اس حوالے سے رابطہ کرنے پر بھارت کی وزارت برائے ویمن اینڈ چائلڈ ڈیولپمنٹ نے سروے کے نتائج پر تبصرہ کرنے سے انکار کر دیا۔

 

یہ بھی پڑھیں: بارش کی دیوی کو راضی کرنے کیلئے بھارت میں مینڈک کی شادی

خیال رہے اس سروے کی ضرورت عالمی طور پر جاری 'می ٹو مہم' کے بعد محسوس کی گئی۔ اس مہم میں دنیا بھر سے ہزاروں خواتین اپنے ساتھ پیش آنے والے جنسی ہراساں کیے جانے کے واقعات منظر عام پر لائیں۔

 

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں