نواز شریف کو بیماری نہیں بلکہ جیل میں ٹینشن ہے، فواد چوہدری

نواز شریف کو بیماری نہیں بلکہ جیل میں ٹینشن ہے، فواد چوہدری
فائل فوٹو

اسلام آباد:فواد چوہدر ی نے کہا ہے کہ  نواز شریف  مستقل باہر جانا چاہتے ہیں تو پلی بارگین کا قانون بھی موجود ہے۔عوام کے پیسے واپس کر دیں۔ یہ آفر تو ان کے پاس اب بھی موجودہے۔ 


 تفصیلات کے مطابق,  وفاقی وزیر اطلاعات ونشریات  فواد چوہدری نے وفاقی کابینہ کے اجلاس کے بعد میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ سپریم کورٹ کی جانب سے نواز شریف کے بیرون ملک جانے پر پابندی کا  فیصلہ  خوش آئند  ہے ، ہم عدالت کے فیصلے کا احترام کرتے ہیں۔ سپریم کورٹ کا فیصلہ وہی ہے جو حکومت  نواز شریف کو آفر کر چکی  ہے،  بہتر تھا اگر وہ ہماری بات مان لیتے۔

 

 فواد چودھری نے کہا کہ سابق وزیراعظم نواز شریف کا بیانیہ ایک بار پھر ایکسپوز ہو گیا ہے، انھیں بیماری نہیں بلکہ جیل کے اندر ٹینشن ہے۔ انھیں پہلے ہی کہا تھا کہ وہ ملک میں جہاں چاہیں علاج کرا سکتے ہیں۔ نواز شریف کے پاس وسائل ہیں، وہ اپنا بیرون ملک سے ڈاکٹر بلا سکتے ہیں۔ یہ آفر تو ان کے پاس اب بھی موجودہے۔ 

فواد چوہدری نے کہا کہ اگر نواز شریف  مستقل باہر جانا چاہتے ہیں تو پلی بارگین کا قانون بھی موجود ہے۔عوام کے پیسے واپس کر دیں۔ وکیل خواجہ حارث کو اپنے موکل نواز شریف کو پیسے واپس کرنے کا مشورہ دینا چاہیے۔

 

وفاقی وزیر نے چیئرمین پیپلز پارٹی کے ٹرین مارچ پر تنقید کرتے ہوئےکہا کہ بلاول نے ٹرین مارچ کے لیے 300 ٹکٹ خریدے، خوشی ہے 300 لوگ پورے بھی ہو گئے۔ پہلی بار بلاول کو ٹکٹوں کے پیسے بھی دینے پڑے۔

 

وفاقی کابینہ کے فیصلوں سے میڈیا کو آگاہ کرتے ہوئے  فواد چوہدری نے کہا کہ  کسی غیر ملکی کو پاکستان میں کہیں جانے کے لیے این او سی کی شرط ختم کر دی ہے۔ سیاحتی مقامات تک فضائی سروس پر ٹیکس زیرو کر دیا گیا ہے۔ برطانیہ، ترکی، یو اے ای اور سعودی عرب کو ای ویزہ کی سہولت دی جا رہی ہے۔ 170 ممالک کو ای ویزہ کی سہولیات فراہم کی جائیں گی۔

 

انہوں نے بتایا کہ اس کے علاوہ اسلام آباد میں بلڈنگ کی اونچائی کی شرط ختم کر دی ہے۔ بلیو ایریا سمیت تمام تجارتی مراکز میں بلند عمارتوں کے لیے این او سی کی ضرورت نہیں ہے۔

 

وزیر اطلاعات فواد چودھری کا کہنا تھا کہ رواں سال نومبر میں کرتارپور کورویڈر کھل جائے گا۔ دس رکنی گروبندک کمیٹی تشکیل دے دی گئی ہے۔