افغانستان میں ’را‘ اور ’این ڈی ایس‘ کا گٹھ جوڑ پاکستان کیخلاف ہے، وزیر خارجہ

افغانستان میں ’را‘ اور ’این ڈی ایس‘ کا گٹھ جوڑ پاکستان کیخلاف ہے، وزیر خارجہ

اسلام آباد: سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے خارجہ امور کو بریفنگ دیتے ہوئے وزیر خارجہ خواجہ آصف نے بتایا کہ امریکی وزیر خارجہ کے ساتھ بھی ملاقات اچھی رہی اور امریکی وزیر دفاع نے ملاقات میں کہا کہ ہم آپ پر اعتبار نہیں کرتے میں نے جواب دیا ہمیں بھی آپ پر اعتبار نہیں جبکہ امریکی تھنک ٹینکس سے خطاب میں کھل کر باتیں کیں۔

خواجہ آصف نے بتایا کہ مشاورت کے ساتھ 4 اکتوبر کو امریکی وزیرخارجہ سے ملاقات طے پائی اور ہم نے ماحول دیکھ کر امریکی وزیر خارجہ سے ملاقات سے معذرت کر لی۔امریکی وزیر خارجہ نے جنرل اسمبلی اجلاس کے موقع پر ملاقات کا کہا تھا۔ وزیر خارجہ نے بتایا کہ سینیٹر جان مکین نے ویتنام کی مثال دی جس پر میں نے جواب دیا کہ ویتنام میں امریکا کو بھاگنا پڑا تھا۔

خواجہ آصف کا مزید کہنا تھا کہ امریکا کے ساتھ شفاف تعلقات چاہتے ہیں اور امریکی لب و لہجے میں تبدیلی آئی ہے جبکہ ہم پاک امریکا تعلقات کے لیے پارلیمنٹ سے رہنمائی لیں گے۔ مشرف دور میں جو کچھ ہوا وہ ہماری تاریخ کا سیاہ باب ہے کیونکہ پارلیمنٹ کو باہر رکھ کر تعلقات رکھنے کے نتائج بہت بھیانک ہیں۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان میں سیکیورٹی صورتحال بہت بہتر ہے اور ڈرون حملے اب ختم ہو چکے ہیں۔ وزیر خارجہ نے انکشاف کیا کہ مہاجرین کے بھیس میں طالبان پاکستان آ سکتے ہیں، افغانستان میں ’را‘ اور ’این ڈی ایس‘ کا گٹھ جوڑ پاکستان کے خلاف ہے۔ دہشتگرد پاکستان میں دہشت گردی کی بڑی کارروائی کرنا چاہتے تھے جس کے لیے 9 افغان خود کش حملہ آوروں کو پاکستان میں داخل ہوتے گرفتار کیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ ہم خلوص کے ساتھ خطے میں امن چاہتے ہیں کیونکہ قومی مفاد پر رتی برابر سمجھوتا نہیں کیا جائے گا اور پورا تعاون فراہم کریں گے لیکن کسی کی ناکامی کا ملبہ قبول نہیں کریں گے۔

 

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں