وزیراعظم کے معاون خصوصی زلفی بخاری کی تقرری چیلنج

وزیراعظم کے معاون خصوصی زلفی بخاری کی تقرری چیلنج
فوٹو سوشل میڈیا

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان کے دوست زلفی بخاری کی بطور معاون خصوصی تقرری کوسپریم کورٹ میں چیلنج کر دیا گیا۔


درخواست گزار عادل چھٹہ نے سپریم کورٹ میں آئینی درخواست دائر کر تے ہوئے موقف اختیار کیا ہے کہ دہری شہریت کا حامل شخص رکن قومی اسمبلی منتخب نہیں ہو سکتا جبکہ معاون خصوصی نے بھی وہی ذمہ داریاں ادا کرنی ہیں جو منتخب رکن اسمبلی کرتا ہے ۔ 

درخواست گزار نے کہا کہ جو کام براہ راست نہیں ہو سکتا وہ بلا واسطہ بھی نہیں کیا جا سکتا۔درخواست میں کہا گیا کہ زلفی بخاری کی نامزدگی غیر قانونی ہے لہٰذا عدالت سے استدعا ہے کہ وہ انہیں بطور معاون خصوصی کام کرنے سے روکے۔

واضح رہے کہ 18 ستمبر کو وزیر اعظم عمران خان نے اپنے قریبی دوست ذوالفقار حسین بخاری عرف زلفی بخاری کو اپنا معاون خصوصی برائے اوورسیز پاکستانی مقرر کیا تھا۔زلفی بخاری وزیراعظم کے چوتھے معاون خصوصی ہیں، ان کے علاوہ شہزاد اکبر، افتخار درانی اور نعیم الحق بھی وزیراعظم کے معاون خصوصی ہیں۔