بہاولنگر تھانے میں پولیس اہلکاروں نے لیڈی کانسٹیبل کو زیادتی کا نشانہ بناڈالا

بہاولنگر تھانے میں پولیس اہلکاروں نے لیڈی کانسٹیبل کو زیادتی کا نشانہ بناڈالا

فائل فوٹو

بہاولنگر :قانون کے محافظ ہی قانون کی دھجیاں بکھیرنے لگے اوربہاولنگر میں پولیس اہلکاروں نے تھانے کے اندر ہی لیڈی کانسٹیبل کو زیادتی کانشانہ بناڈالا ۔

یہ بھی پڑھیں:آئندہ مالی سال کا وفاقی بجٹ آج پیش کیا جائے گا

ذرائع کے مطابق بہاولنگر کے تھانہ مدرسہ میں لیڈی کانسٹیبل سے زیادتی کا واقعہ پیش آیا اور ساتھی پولیس اہلکار ویڈیو بنا کر بلیک میل بھی کرتے رہے جبکہ ڈی پی او نے ایس ایچ اوسمیت چاروں اہلکاروں کو معطل کردیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:میشا شفیع نے کینیڈین امیگریشن کیلئے علی ظفر پر جھوٹے الزامات لگائے

قانون کے محافظ یا جنسی درندے بن گئے اوراے ایس آئی نے تھانے کے محرر کے ساتھ ملکرلیڈی کانسٹیبل کو زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا جبکہ ویڈیو بناکر ڈیڑھ ماہ تک بلیک میل بھی کرتے رہے،کاشف اور محرر فہیم نے مبینہ طورپر نشے میں دھت تھے۔

یہ بھی پڑھیں:کترینہ اور رنویر کی ڈانس کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل

ذرائع کا کہنا ہے کہ پولیس نے بدنامی سے بچنے کے لیے واقعہ تھانہ کی عمارت میں ہونے کے بجائے تھانہ چشتیاں کی حدود میں ظاہر کیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:شیریں مزاری کی بیٹی خواجہ آصف کی حمایت میں سامنے آگئیں

واقعہ کے بعدڈسٹرکٹ پولیس آفیسر عطاالرحمن نے ایس ایچ اوسمیت چار اہلکاروں کو معطل کر دیا ہے جبکہ ڈی پی او نے ڈی ایس پی چشتیاں کو 24گھنٹوں میں انکوائری رپورٹ مکمل کرنے کی ہدایت بھی کردی ہے۔

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں