سعودی عرب میں شرمناک ترین کام کرتی خواتین گرفتار

سعودی عرب میں شرمناک ترین کام کرتی خواتین گرفتار

سعودی عرب میں مخلوط پارٹی کی ویڈیو سامنے آنے کے بعد مذہبی پولیس نے ویڈیو میں دکھائی دینے والے خواتین کو حراست میں لے لیا


فلم میں انہیں پیتے ، ناچتے اور مردوں کیساتھ شرمناک حرکات کرتے دیکھاگیاتھا، یہ ویڈیو سامنے آتے ہی ملک بھر میں ہنگامہ برپاہوگیا اور پولیس نے کھوج لگانا شروع کردی لیکن بالآخرویڈیو میں دکھنے والے ایک ’پلر‘ کی مدد سے پارٹی کے منتظم تک پہنچنے میں کامیاب ہوگئی تھی ۔ یوٹیوب پر جاری ہونیوالی ویڈیو میں شراب کی بوتلوں کیساتھ ایک ٹیرس پر نوجوان لڑکوں اور لڑکیوں کومیوزک کیساتھ لطف اندوز ہوتے دیکھاگیا،

یہ بھی دیکھاگیاکہ خواتین نے مغربی لباس زیب تن کررکھاتھا ۔یادرہے کہ ریاست میں مخلوط پارٹیوں ، شراب نوشی یا شراب کی فروخت پر سخت پابندی ہے ۔ ویڈیو سامنے آنے کے بعد جدہ پولیس نے  ایک سپیشل ٹیم تشکیل دی جنہوں نے اس پارٹی کا محل وقوع ڈھونڈنے کی کوشش کی تو تصویر سے جدہ فلیگ پول کی شناخت ہوگئی ،

جدہ فلیگ پول افتتاح کے وقت یعنی 2014ءسے دنیا کا بلندترین فلیگ پول تھا، ابتدائی طورپر ایک شخص پکڑاگیا جس نے پارٹی کا اہتمام کرنے کا اعتراف کرلیا۔اس کے بعد تین خواتین مہمان، ایک لبنانی خاتون اور اس کی دوست سے پارٹی میں ہونے کے بارے میں پوچھ گچھ کی جنہوں نے اعتراف کرلیا۔

بتایاگیاہے کہ دیگر مہمانوں کی شناخت کیلئے کام شروع کردیاگیا، ملزمان کو سخت سزا کا سامنا کرنا پڑسکتاہے ، چند دیگر مسلمان ممالک کے برعکس سعودی عرب میں قوانین مسلمانوں اور غیرمسلم کیلئے ایک ہی ہیں ۔