نواز شریف اور شہباز شریف کیخلاف ریفرنس دائر کرنے کی منظوری

نواز شریف اور شہباز شریف کیخلاف ریفرنس دائر کرنے کی منظوری

اسلام آباد : قومی احتساب بیورو (نیب ) نے کرپشن کے الزام میں سابق وزیر اعظم نواز شریف ، راجہ پرویز اشرف، وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف ، سابق وزیر بابر سمیت دیگر افراد کیخلاف ریفرنس دائر کرنے کی منظوری دیدی ۔


تفصیلات کے مطابق نیب کے ایگزیکٹو بورڈ کا اجلاس چیئرمین جسٹس جاوید اقبال کی زیرصدارت نیب ہیڈکواٹرز مین ہوا جس میں بد عنوانی کے 6ریفرنس دائر کرنے ،4انکوائریوں ،11 انوسٹی گیشنز کی باقاعدہ منظوری دیدی گئی ہے۔ایگزیکٹو بورڈ نے سابق وزیراعظم نوازشریف اور وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف اور دیگر کے خلاف ریفرنس دائر کرنے کی منظوری دیدی ہے ،ان پر نے مبینہ طورالزام ہے کہ انہوں نے رائیونڈ سے شریف فیملی کے گھر تک سال 2000 میں غیر قانونی دور رویہ سڑک تعمیر کر کے قومی خزانے کو تقریبا ساڑھے چار کروڑ روپے کا نقصان پہنچایا۔

ایگزیکٹو بورڈ نے نندی پور الیکٹراک پراجیکٹ میں سابق وفاقی وزیر ڈاکٹر بابراعوان ،سابق وزیر پانی و بجلی راجہ پرویز اشرف ،سابق سیکریٹر قانون و انصاف مسعود چشتی ،سابق سیکریٹری شاہد رفیع اور سابق ڈائریکٹر اعجاز بشیر کے خلاف انوسٹی گیشن کی منظوری دی ،ان پر مبینہ طور پر الزام ہے کہ انہو ں نے نندی پور پن جبلی منصوبہ میں تاخیر کی جس سے قومی خزانے کو 113 ارب روپے کا نقصان پہنچا۔

اجلاس میں سابق چیئرمین پاکستان تمباکو بورڈ صاحبزادہ خالد کے خلاف بد عنوانی کاریفرنس دائر کرنے کا فیصلہ کیا گیاہے ملزم پر اختیارات کا ناجائز استعمال کرتے ہوئے غیر قانونی بھرتیاں کرنے کا الزام ہے جس سے قومی خزانے کو کروڑوں روپے کا نقصان پہنچا۔نیب کے ایگزیکٹو بورڈ نے متروکہ وقف املاک بور ڈ کے سابق چیئر مین سید آصف اختر ہاشمی کے خلاف بد عنوانی کا ریفرنس دائر کرنے کی منظور ی دی ،ملزم پر متروکہ املاک بورڈ کے 450 پلاٹوں کی غیر قانونی الاٹمنٹ اور اختیارت کے ناجائز استعمال کا الزام ہے جس سے قومی خزانے کو اربوں روپے کا نقصان پہنچا۔