سعودی عالم دین سے غیر ملکی شہری نے عجیب و غریب سوال پوچھ لیا

سعودی عالم دین سے غیر ملکی شہری نے عجیب و غریب سوال پوچھ لیا

ریاض: سعودی سرکاری ٹی وی پر دینی پروگرام “نور علی الدرب” میں سعودیہ میں مقیم ایک شخص نے ٹیلیفون پر عجیب اور دلچسپ سوال پوچھ لیا اور اس کا فتویٰ بھی مانگ لیا۔


سائل نے ڈاکٹر صالح بن حمیدسے سوال کیا کہ وہ سعودیہ میں اپنے ایک دوست کے ساتھ اپنی بیوی کی شادی کروانا چاہتا ہے جو بعدمیں اسکی بیوی کو طلاق دے دے گا۔یہ طریقہ میں اس لیئے اپنارہاہوں کے باقی ہر طرح سے سعودی عرب اپنی بیوی کو بلوانے پر ناکامی کی بنا پر کررہا ہوں۔

مسجد حرام کے امام ڈاکٹر صالح بن حمید نے اس کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ یہ عمل شرعا ناجائز ہے اور اس کو “خطرناک راستہ” قرار دیتے ہوئےکہاکہ ایسی صورت میں ہونے والی شادی فرضی ہوگی۔

انہوں نے اس حیلے کے نتائج سے خبردار کیا کیوں کہ حال اور مسقبل میں اس کے کئی مفاسد سامنے آ سکتے ہیں۔ اس کے علاوہ یہ عمل سوال کرنے والے شخص کے اپنے دوست اور اپنی بیوی کے ساتھ تعلق کو بھی ضرر پہنچانے کا سبب بنے گا۔