پی ڈی ایم عملی طور پرختم ہو چکی ہے، وزیراعظم عمران خان

پی ڈی ایم عملی طور پرختم ہو چکی ہے، وزیراعظم عمران خان
کیپشن:   پی ڈی ایم عملی طور ختم ہو چکی ہے، وزیراعظم عمران خان سورس:   فوٹو/سوشل میڈیا

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نے پارلیمانی پارٹی کے اجلاس میں گفتگو کرتے ہوئے کہا پی ڈی ایم عملی طور ختم ہو چکی ہے اور انہوں نے جلسوں میں اپنا پورا زور لگا کر دیکھ لیا ہے کیونکہ ان عوام ان کے ساتھ نہیں تاہم یہ الیکشن کمیشں میں ہمیں پھنسانا چاہتے تھے لیکن خود ہی اس میں پھنس گئے ہیں۔ براڈ شیٹ کے علاوہ سرے محل اور حدیبیہ پیپر ملز کیس کی بھی مکمل تحقیقات ہونگی۔ 

اجلاس کے دوران ارکان پارلیمنٹ نے کراچی ٹرانسفارمیشن پلان میں تاخیر پر سوالات کئے اور نجیب ہارون نے کہا 2023 تک کچھ نہیں ہو گا جبکہ کے فور منصوبہ بھی مکمل نہیں ہو گا اور نہ ہی نالے صاف ہوں گے۔ جس پر وزیراعظم عمران خان نے نجیب ہارون کو جواب دیا کہ آپ تو ہمیں اندھیرا دکھا رہے ہیں تاہم انہوں نے وزیراعظم کو نجیب ہاروں نے کہا آپ کو میں بالکل ٹھیک ہی بتا رہا ہوں۔ 

پارلیمانی پارٹی کے اجلاس میں ہی وزیراعظم نے ارکان پارلیمنٹ کو ترقیاتی فنڈز جاری کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا آئندہ سال سے ارکان پارلیمنٹ کو 50 کروڑ کے فنڈز دیئے جائیں گے اور پہلی بار کراچی ٹرانسفارمیشن پلان پر سنجیدگی سے کام ہو رہا ہے۔ کراچی کو صوبائی حکومت کے رحم و کرم پر نہیں چھوڑ سکتے اگر صوبائی حکومت ساتھ نہ بھی لیکن ہم اپنی ذمہ داری ادا کریں گے۔

پارٹی رکن نور عالم خان نے وزرا کے احتساب کا مطالبہ کیا اور کہا وزرا کا احتساب ہونا چاہیئے اور میں بھی احتساب کے عمل سے گزر چکا۔ وزیراعظم کے مشیر، وزیر سبز باغ دکھا رہے ہیں اور وزیراعظم صاحب ٹیکنوکریٹ چلے جائیں گے لیکن ہم ذلیل ہو جائیں گے، میری باتیں آپ کو بری لگیں گی لیکن پارٹی سے مخلص ہوں اس لیے صاف باتیں کر رہا ہوں۔