افتخار چو ہدری کے خلاف پریس کانفرنس کرنے پر نااہل کیا گیا ، فواد چوہدری

افتخار چو ہدری کے خلاف پریس کانفرنس کرنے پر نااہل کیا گیا ، فواد چوہدری

فوٹو: فائل

اسلام آباد : پی ٹی آئی رہنما فواد چوہدری نے کاغذات نامزدگی مسترد ہونے اور الیکشن کے لیے نا اہل قرار دئے جانے کی وجہ سابق چیف جسٹس افتخار محمد چو ہدری کے خلاف پریس کانفرنس کو قرار دے دیا ۔

پی ٹی آئی رہنما فواد چوہدری نے سوشل میڈیا پر ویڈیو پیغام جاری کیا جس میں انہوں نے کہا کہ آج جو فیصلہ آیا ہے اور میرے کاغذات نامزدگی مسترد ہو گئے ہیں ، اس پر میں اپنے دوستوں کو کہنا چاہتا ہوںکہ گھبرانے کی کوئی ضرورت نہیں ہے۔جب آپ اس گیم میں ہوتے ہیں تو اس طرح کی رکاوٹیں ڈالی ہی جاتی ہیں، مجھے پیغام آیا تھا کہ افتخار چودھری کے خلاف پریس کانفرنس نہ کریں بصورت دیگر رد عمل آئے گا اور آپ کے الیکشن پر اثر پڑے گا سو وہی ہوا، لیکن کوئی بات نہیں۔
یہ بھی پڑھیں۔۔۔فواد چودھری این اے 67 جہلم سے نااہل قرار


انہوں نے کہا کہ عمران خان ہمارے لیڈر ہیں اور ان کے اوپر جو بھی اس طرح کی بات گا اسے اس کا جواب ضرور ملے گااور افتخار چودھری اور ان کی باقیات کے خلاف ہماری جدوجہد بھی جاری رہے گی۔یہ جو فیصلہ آیا ہے اس کا بنیادی مقصد میری الیکشن مہم کو متاثر کرنا ہے کیونکہ اصل میں اس کے اندر کچھ ہے ہی نہیں۔ پہلے اس کیس کو معطل کیا گیا ، پھر اس پر از خود نوٹس لیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ میں اس سلسلے میں سپریم جوڈیشل کونسل سے بھی رجوع کر رہا ہوں، یہ جو جج صاحب ہیں عباد الرحمان لودھی ،یہ افتخار چودھری کے چہیتے آدمی ہیں جن کو تعینات کیاگیا۔
یہ بھی پڑھیں۔۔۔نواز شریف کی جائیدادیں اور کارنامے سامنے آنے چاہئیں: فواد چوہدری


اور ان کو تعینات کیسے کیا گیا پوری پنڈی بار کو اس بات کا علم ہے۔ ان کی ساکھ کیا ہے پوری پنڈی بار کو علم ہے لہٰذا میں نے پاکستان بار کونسل اور سپریم جوڈیشل کونسل کو ان کے بارے میں آج شکایات بھجوا رہا ہوں۔ اور یہ میرا قانونی حق ہے۔ فواد چوہدری نے اس معاملے پر قانونی چارہ جوئی کا اعلان کرتے ہوئے کہاکہ یہ فیصلہ آئندہ دو تین روز میں واپس بھی لے لیا جائے گا کیونکہ اس کا کوئی میرٹ نہیں ہے۔انہوں نے اپنے کارکنوں کو پیغام دیا کہ آپ سب اپنی مہم جاری رکھیں کیونکہ بہت جلد ہم میدان میں واپس ہوں گے۔

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں