وزیراعظم اور افغان صدر کے درمیان ملاقات، دو طرفہ تعلقات پر تبادلہ خیال

وزیراعظم اور افغان صدر کے درمیان ملاقات، دو طرفہ تعلقات پر تبادلہ خیال
افغان صدر ڈاکٹر اشرف غنی آج 2 روزہ دورے پر اسلام آباد پہنچے۔۔۔۔۔۔۔۔فوٹو/ بشکریہ ریڈیو پاکستان

اسلام آباد: افغان صدر اشرف غنی کا وزیراعظم ہاؤس آمد پر شاندار استقبال کیا گیا۔ وزیراعظم عمران خان نے معزز مہمان کا استقبال کیا۔ افغان صدر اشرف غنی نے گارڈ آف آنر کا معائنہ کیا۔ دونوں رہنماؤں کے درمیان ون آن ون ملاقات ہوئی اور جس میں دو طرفہ تعلقات اور علاقائی سیکیورٹی کی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔


قبل ازیں افغان صدراشرف غنی سے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے بھی ملاقات کی جس میں دو طرفہ تعلقات، افغان امن عمل، تجارت میں اضافے، معیشت، سرمایہ کاری کے فروغ، مواصلات اور توانائی کے شعبے میں تعاون پر تبادلہ بات چیت کی گئی۔ دونوں رہنماؤں میں امن و اخوت کے لئے افغانستان پاکستان حکمت عملی کوعوام کی بہتری کے لئے بروئے کار لانے پر اتفاق کیا گیا۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ افغانستان اور پاکستان کے مابین دیرینہ جغرافیائی اور تاریخی تعلقات ہیں، افغان عوام نے بے پناہ مصائب اور مشکلات کا سامنا کیا ہے، افغانستان میں پائیدار امن و استحکام اور خوشحالی پاکستان کے اپنے مفاد میں ہے، پاکستان نتیجہ خیز مذاکرات کی ضرورت پر ہمیشہ زور دیتا رہا ہے اور افغان امن عمل  کے لئے کھلے دل اور نیک نیتی سے مصالحانہ کردار ادا کرتا رہے گا۔

افغان صدر ڈاکٹر اشرف غنی 2 روزہ دورے پر اسلام آباد پہنچے۔ افغان صدر کا استقبال وزیر اعظم کے مشیر برائے تجارت عبدالرزاق داؤد نے کیا۔ اس موقع پر افغان سفیر عاطف مشال اور دفتر خارجہ کے اعلی افسران بھی موجود تھے۔

اپنے دو روزہ دورے کے دوران وہ صدر مملکت سے ملاقات کریںگے اور پاکستانی قیادت سے ملاقاتوں میں پاک افغان مفاہمتی یاد داشتوں پر دستخط ہوں گے۔ افغان صدر اسلام آباد میں تھنک ٹینک کے اجلاس سے خطاب بھی کریں گے۔ افغان صدر کے اعزاز میں صدر ڈاکٹرعارف علوی عشائیہ دیں گے۔ افغان صدر جمعے کو لاہور جائیں گے جہاں وہ گورنر اور وزیر اعلی پنجاب سے ملاقات کریں گے۔ افغان صدر بادشاہی مسجد میں نماز جمعہ ادا کریں گے اور اسی شام لاہور سے واپس افغانستان روانہ ہوں گے۔