پاکستان کے افریقی ممالک کے ساتھ بہترین سیاسی، سفارتی تعلقات ہیں،شاہ محمود قریشی

پاکستان کے افریقی ممالک کے ساتھ بہترین سیاسی، سفارتی تعلقات ہیں،شاہ محمود قریشی

اسلام آباد :وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ پاکستان کے افریقی ممالک کے ساتھ بہترین سیاسی، سفارتی تعلقات ہیں،افریقی ممالک کے ساتھ مثبت، بامقصد اور یکساں ترقی کے مقاصد کے باہمی اصولوں کے تحت روابط کے خواہشمند ہیں،ہمیں افریقی ممالک کے ساتھ اپنے تجارتی حجم کو بڑھانے کی ضرورت ہے،مجھے امید ہے یہ سفراءکانفرنس افریقی ممالک کے ساتھ ہمارے باہمی تعلقات اور اقتصادی تعاون کو مزید مستحکم کریگی۔ بدھ کو صدر پاکستان ڈاکٹر عارف علوی وزارت خارجہ پہنچے تو وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے صدر مملکت کا خیرمقدم کیا۔


صدر پاکستان نے وزارت خارجہ میں منعقدہ افریقی ممالک کی دو روزہ سفراءکانفرنس کی افتتاحی تقریب میں شرکت کی ۔یہ دو روزہ افریقی ممالک کی سفراءکانفرنس ،وزیر خارجہ کےمعاشی سفارتکاری کے اقدام کا اہم جزو ہے۔

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہاکہ ہمیں انتہائی مسرت ہے کہ اس وقت صدر پاکستان اس دو روزہ سفراءکانفرنس کی افتتاحی تقریب میں شرکت فرما رہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ اس کانفرنس کے دو بنیادی مقاصد ہیں،پہلا افریقی ممالک کے ساتھ اپنے روابط کا فروغ اور دوسرا پاکستان کے معاشی استحکام کے لئے عملی اقدام کرنا ہے۔انہوں نے کہاکہ افریقہ ایک اہم براعظم ہے 54 ممالک پر مشتمل، 2.3ٹریلین ڈالر کی مجموعی جی ڈی پی کا حامل ہے۔

انہوں نے کہاکہ پاکستان کے افریقی ممالک کے ساتھ بہترین سیاسی، سفارتی تعلقات ہیں۔ انہوںنے کہاکہ پاکستان کی فورسز قیام امن کیلئے اقوام متحدہ کے امن مشنز کے تحت بہت سے افریقی ممالک میں خدمات سرانجام دے چکے ہیں ،پاکستان نے نیم، جی 77،جیسے بین الاقوامی فورمز پر افریقی ممالک کا ساتھ دیا۔ انہوںنے کہاکہ افریقی ممالک کے 700 ڈپلومیٹس، پاکستان کی فارن سروس اکیڈمی سے ٹریننگ حاصل کر چکے ہیں لیکن ہمیں افریقی ممالک کے ساتھ اپنے تجارتی حجم کو بڑھانے کی ضرورت ہے۔

انہوں نے کہاکہ ہم نے معاشی سفارتکاری کا آغاز کیا ہے جس کے تحت ہم برآمدات کو بڑھانے اور کثیرجہتی معاشی شعبہ جات میں کاوشوں کو بروئے کار لا کر، قیادت کے وژن کے مطابق معیشت کو مستحکم کرنے کیلئے پر عزم ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ہم افریقی ممالک کے ساتھ مثبت، بامقصد اور یکساں ترقی کے مقاصد کے باہمی اصولوں کے تحت روابط کے خواہشمند ہیں۔

انہوں نے کہاکہ مجھے امید ہے یہ سفراءکانفرنس افریقی ممالک کے ساتھ ہمارے باہمی تعلقات اور اقتصادی تعاون کو مزید مستحکم کریگی۔بعد ازاں وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کی زیر صدارت افریقی ممالک کی سفرا کانفرنس کے دوسرے سیشن کا آغاز ہوا تو سیکرٹری خارجہ سہیل محمود، سیکرٹری تجارت سردار احمد نواز سکھیرا بھی کانفرنس میں شریک تھے ۔

اجلاس میں الجیریا، مالی اور موریطانیہ اور دیگر افریقی ممالک میں موجود دو طرفہ تعاون کے حوالے سے میسر اقتصادی مواقعوں کا جائزہ لیا گیا ۔وزیر خارجہ نے افریقی ممالک میں تعینات پاکستانی سفراءکو اس کانفرنس میں شرکت پر خوش آمدید کہا ۔وزیر خارجہ نے کہاکہ ہم افریقی ممالک کے ساتھ اقتصادی تعاون کے فروغ کیلئے بامعنی اور نتیجہ خیز روابط کو فروغ دینے کے خواہشمند ہیں مخدوم شاہ محمود قریشی۔

افریقی ممالک میں تعینات پاکستانی سفراء نے پاکستان اور افریقی ممالک کے مابین دو طرفہ تعلقات اور مختلف شعبہ جات میں دو طرفہ تعاون اور تجارتی حجم کے حوالے سے شرکاءکو آگاہ کیا۔

افریقی ممالک میں تعینات پاکستانی سفراءنے افریقی ممالک کے ساتھ دو طرفہ معاشی تعاون اور تجارتی حجم میں اضافہ کیلئے مختلف تجاویز پیش کیں۔یہ دو روزہ سفراءکانفرنس 27 اور 28 نومبر تک وزارت خارجہ میں جاری رہے گی۔ اختتامی کانفرنس سے وزیر اعظم عمران خان خطاب کرینگے ۔