کونسے بلڈ گروپ والے افراد میں ہارٹ اٹیک کا خطرہ زیادہ ہوتا ہے

کونسے بلڈ گروپ والے افراد میں ہارٹ اٹیک کا خطرہ زیادہ ہوتا ہے

ایمسٹرڈیم : طبی تحقیق میں سامنے آیا ہے کہ بلڈ گروپ بھی ہارٹ اٹیک کا خطرہ بڑھانے کا باعث بن سکتا ہے۔


 گرونینگن یونیورسٹی میڈیکل سینٹر کی تحقیق میں بتایا گیا کہ خون کے گروپ سے جانا جاسکتا ہے کہ کسی فرد میں ہارٹ اٹیک کا خطرہ ہے یا نہیں۔

 تحقیق کے مطابق اے ، بی اور اے بی بلڈ گروپ کے حامل افراد میں ہارٹ اٹیک کا خطرہ او (O) بلڈ گروپ کے حامل افراد کے مقابلے میں 9 فیصد زیادہ ہوتا ہے۔تحقیق میں دعویٰ کیا گیا کہ اے اور بی بلڈ گروپ کے حامل افراد میں اس جان لیوا دورے کا خطرہ ممکنہ طور پر اس لیے زیادہ ہوتا ہے کیونکہ ان میں ایک قسم کے پروٹین ولبرینڈ وون کی مقدار زیادہ ہوتی ہے۔

 محققین کے مطابق اے بلڈ گروپ کے حامل افراد میں کولیسٹرول کی سطح زیادہ ہونے کا خطرہ ہوتا ہے جو کہ ہارٹ اٹیک کے بڑے اسباب میں سے ایک ہے۔

 اسی طرح اے اور بی بلڈ گروپ والے افراد میں ایک پروٹین ہائیر گلیسٹین تھری کی سطح بھی زیادہ ہوتی ہے جو جسمانی ورم کا باعث بنتی ہے۔

 محققین کا کہنا تھا کہ خون کی شریانوں سے متعلق امراض کے تجزیے کے حوالے سے بلڈ گروپ کا بھی خیال رکھا جانا چاہیے اور اسے کولیسٹرول، عمر، جنس اور بلڈ پریشر جیسے عوامل کے ساتھ دیکھا جانا چاہیے۔