احتساب عدالت نے شہباز شریف کے داماد علی عمران کی جائیداد قرقی کا حکم دیدیا

احتساب عدالت نے شہباز شریف کے داماد علی عمران کی جائیداد قرقی کا حکم دیدیا
فائل فوٹو

لاہور: نیب کی زیر حراست پاکستان مسلم لیگ ن کے صدر اور سابق وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف کے داماد علی عمران کی احتساب عدالت نے جائیداد قرق کرنے کا حکم دیدیا ہے۔


تفصیلات کے مطابق لاہور کی احتساب عدالت میں سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف کے داماد عمران علی کی جائیداد ضبط کرنے کے کیس کی سماعت ہوئی۔قومی احتساب بیورو (نیب) کی جانب سے عمران علی کی جائیداد کی تفصیلی رپورٹ عدالت میں جمع نہیں کرائی گئی۔

نیب پراسیکیوٹر نے عدالت کو بتایا کہ عمران علی کے علی سینٹر، علی ٹاؤن میں کروڑوں روپے مالیت کے دفاتر اور اپارٹمنٹ ہیں، علی اینڈ فاطمہ ڈویلپر کے نام پر گلبرگ میں اربوں روپے مالیت کا پلازہ ہے، گلبرگ 3 میں کروڑوں روپے مالیت کا پلاٹ ہے، غوث الاعظم ڈویلپرز کے نام پر بھی کروڑوں روپے کی جائیداد علی عمران کے نام ہے۔

نیب پراسیکیوٹر نے کہاکہ علی عمران پر پنجاب پاور ڈویلپمنٹ کمپنی کے چیف فنانشل آفیسر سے 13 کروڑ روپے رشوت لینے کا الزام ہے، انہیں نیب میں طلب کیا گیا لیکن وہ پیش نہیں ہوئے، علی عمران کے وارنٹ گرفتاری جاری ہوئے تاہم ملزم بیرون ملک فرارہو ہوچکا ہے۔

نیب پراسیکیوٹر نے مزید بتایا کہ مدینہ فیڈز مل اور علی پروسیسڈ فوڈز پرائیویٹ لمیٹڈ بھی عمران علی کی ملکیت ہے۔عدالت نے نیب پراسیکیوٹرکے دلائل سننے کے بعد شہبازشریف کے داماد عمران علی کی جائیداد قرق کرنے کا حکم دے دیا۔عدالت نے نیب کو آئندہ سماعت پر عمران علی کی جائیداد کی تفصیلی رپورٹ پیش کرنے کرنے بھی حکم دیا۔