سنٹرل جیل فیصل آباد میں 15سال بعد قاتل کو پھانسی دیدی گئی

سنٹرل جیل فیصل آباد میں 15سال بعد قاتل کو پھانسی دیدی گئی

فیصل آباد:سنٹرل جیل فیصل آباد میں 15 سال بعد قاتل کو پھانسی دیدی گئی ‘ ضروری کارروائی کے بعد میت ورثا کے سپرد کر دی گئی۔


اطلاعات کےمطابق 14 نومبر2002ء کو مخالف کا خون کرنے پر ریاض بھٹی کے خلا ف تھانہ کھچی والا میں قتل کیس کا اندراج عمل میں لایا گیا تھا‘ سات جنوری 2005ء کو مجرم کی گرفتاری عمل میں آئی‘ جرم ثابت ہونے پر تیس نومبر2005ء کو ایڈیشنل سیشن جج ہارون آباد کیمپ چوہدری عبد الغفور کی عدالت نے مجرم کو موت کی سزا سنائی ۔

چھ روز قبل ایوان صدر سے رحیم کی اپیل مسترد ہونے پر سیشن جج بہاولنگر نے مجرم کی پھانسی پر عمل درآمد کے لئے ستائیس ستمبر کی تاریخ مقرر کی تو بہاولپور جیل میں بند قیدی نے اہل خانہ کے سمندری منتقل ہونے کے پیش نظر موت کی سزا پر عمل درآمد فیصل آباد سنٹرل جیل میں کئے جانے کی خواہش کا اظہار کیا جس پر پنجاب حکومت کی منظوری سے دو روز اسے قبل بہاولپور جیل سے فیصل آباد سنٹرل جیل منتقل کیا گیا۔

اندرون جیل آخری ملاقات کے موقع پر قیدی آنسو بہانے والے لواحقین کو تسلی دیتا رہا‘ جیل انتظامیہ کے مطابق سزا پر عمل درآمد روکے جانے کے بارے میں مجاز اتھارٹی کی جانب سے کوئی سٹے آرڈر جاری نہ ہوا تو مجرم ریاض بھٹی کو آج صبح پھانسی دے دی گئی ۔