منی بجٹ سے صرف امیروں کو فائدہ ہوا، بلاول بھٹو

منی بجٹ سے صرف امیروں کو فائدہ ہوا، بلاول بھٹو

اسلام آباد:چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ منی بجٹ سے صرف امیروں اور عمران خان کے اے ٹی ایمز کو فائدہ ہوا ہے۔


تفصیلات کے مطابق بلاول بھٹو زرداری نے  کہا کہ منی بجٹ میں کوئی ایک بھی نئی چیز نہیں کی گئی ہے اور نہ ہی بجٹ میں کوئی منصوبہ بندی نظر آئی ہے۔ روزگار کے بڑے وعدے کیے گئے لیکن حکومتی پالیسی سے بے روزگاری بڑھے گی،انہوں نے کہا کہ وزیر خزانہ اسد عمر نے یقین دہانی کرائی تھی کہ حکومت میں آکر عام آدمی کو سہولتیں دیں گے اور میں سمجھ رہا تھا کہ اسد عمر جو بجٹ لائیں گے اس سے غریبوں کو فائدہ ہو گا لیکن ایسا کچھ نہیں ہوا۔

انہوں  نے کہا کہ تحریک انصاف نے وعدہ کیا تھا کہ ٹیکس نیٹ بڑھائیں گے لیکن گیس کی قیمت بڑھا دی گئی۔ یہ لوگ اصل مسائل کی طرف سے توجہ ہٹانے کے لیے صرف پروپیگنڈا کرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ہم نے اپنے دور حکومت  میں مسلم لیگ نون کے رہنما چوہدری نثار کو پبلک اکانٹ کمیٹی (پی اے سی)کی چیئرمین شپ دی تھی اور اب یہ چیئرمین شپ اپوزیشن کو ہی ملنی چاہیے، بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ یہ سلیکٹڈ حکومت سلیکٹڈ وزیراعظم اور سلیکٹڈ وزیر ہیں، ہم نے ضیا اور مشرف کی جیلیں دیکھیں، عمران خان کی جیل بھی جانے کو تیار ہیں۔

بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ سی پیک سے متعلق غیر ذمے دارانہ بیانات دیے گئے، چین سے براہ راست بات کرنی چاہیے تھی، دورہ سعودی عرب میں حکومت کو کیا ملا، آج تک عوام کو نہیں بتایا گیا