شیخ رشید نے چیئرمین نیب کیخلاف توہین عدالت کی درخواست دائر کر دی

شیخ رشید نے چیئرمین نیب کیخلاف توہین عدالت کی درخواست دائر کر دی

اسلام آباد: شیخ رشید نے حدیبیہ ملز کیس میں اپیل دائر نہ کرنے کے معاملے پر چیئرمین نیب کے خلاف سپریم کورٹ سے رجوع کر لیا ہے۔ شیخ رشید نے چیئرمین نیب کے خلاف توہین عدالت کی درخواست دائر کرتے ہوئے مؤقف اپنایا ہے کہ نیب نے 21 جولائی کو یقین دہانی کروائی تھی کہ ایک ہفتے کے اندر حدیبیہ ملز کیس کے ملزمان کے خلاف اپیل دائر کر دی جائے گی اور عدالت نے بھی نیب کی یقین دہانی کو اپنے فیصلے میں تحریر کیا تھا جب کہ 7 روز گزرنے کے بعد نیب کو یقین دہانی سے متعلق نوٹس بھی بھجوایا تھا لیکن چیئرمین نیب نے تاحال نوٹس کا کوئی جواب نہیں دیا۔

 

درخواست میں کہا گیا ہے کہ سپریم کورٹ کی جانب سے تشکیل دی گئی جے آئی ٹی نے حدیبیہ ملز کیس کی تفصیلی تحقیقات کی ہیں جس میں نواز شریف اور اسحاق ڈار منی لانڈرنگ میں ملوث پائے گئے ہیں جب کہ شریف خاندان کے دیگر افراد نے بھی منی لانڈرنگ سے فائدہ اٹھایا۔ جے آئی ٹی کے ملزمان کے خلاف ناقابل تردید شواہد سے پتہ چلا ہے کہ منی لانڈرنگ 1991 سے ہی شروع ہو گئی تھی اور سعید احمد اور مختار حسین نامی اشخاص کے اکاؤنٹ میں کروڑوں ڈالرز منتقل کئے گئے جب کہ 1993 سے 1995 کے دوران مزید 35 لاکھ ڈالر لندن منتقل کئے گئے۔

 

درخواست میں کہا گیا چئیرمین نیب اور پراسیکیوٹر جنرل غیرجانبدارانہ کام کے پابند ہیں لیکن یہ دونوں افسران ملزمان کے زیر اثر ہیں اور اپیل دائر نہ کرکے عدالتی فیصلے پر عملدرآمد میں رکاوٹیں پیدا کی جا رہی ہیں اور اگر عدالت نے نوٹس نہ لیا تو منی لانڈرنگ کی تحقیقات نہ کرنے کی سازش کامیاب ہو جائے گی۔ درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ عدالت نیب کو اپیل دائر کرنے کی یقین دہانی پر عملدرآمد کا حکم دے اور اپیل دائر نہ کرنے پر چئیرمین نیب اور پراسیکیوٹر کے خلاف توہین عدالت کی کارروائی کی جائے۔

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں