عائشہ اکرم کا گرفتار ملزمان کی شناختی پریڈ سے انکار

عائشہ اکرم کا گرفتار ملزمان کی شناختی پریڈ سے انکار
سورس: فوٹو: بشکریہ ٹوئٹر

لاہور: مینار پاکستان واقعہ میں ہراسانی کا شکار ہونے والی خاتون ٹک ٹاکر نے گرفتار ملزمان کی شناختی پریڈ سے انکار کر دیا ہے جن کا کہنا ہے کہ طبیعت ناسازی کے باعث شناختی پریڈ کیلئے جیل نہیں آ سکتی۔ 

میڈیا رپورٹس کے مطابق یوم آزادی کے موقع پر مینار پاکستان پر ہراسانی کا واقعہ پیش آنے کے بعد لاہور پولیس نے تفتیش کے دوران 144 کے قریب افراد کو حراست میں لیا تھا جن کی آج شناختی پریڈ تھی تاہم ہراسانی کا شکار خاتون ٹک ٹاکر عائشہ اکرم نے شناختی پریڈ سے انکار کردیا۔

ملزمان کی شناخت پریڈ کیلئے سپیشل جوڈیشل مجسٹریٹ رضوان احمد کو مقرر کیا گیا تھا تاہم وہ کورونا وائرس کا شکار ہو گئے جس کے بعد سپیشل جوڈیشل مجسٹریٹ اعجاز ثناءاللہ جج مقرر کیا گیا تھا۔ 

خاتون ٹک ٹاکر عائشہ اکرم کا کہنا ہے کہ طبیعت ناسازی کی وجہ سے جیل شناختی پریڈ کیلئے نہیں آ سکتی، خاتون ٹک ٹاکر کی غیر حاضری کے باعث شناختی پریڈ کیلئے آئے جوڈیشل مجسٹریٹ کیمپ جیل سے واپس روانہ ہوگئے۔