ملاوٹ شدہ دودھ اور پانی بیچنے والوں کیخلاف پنجاب فوڈ اتھارٹی کا کریک ڈاون

ملاوٹ شدہ دودھ اور پانی بیچنے والوں کیخلاف پنجاب فوڈ اتھارٹی کا کریک ڈاون

لاہور :پنجاب فوڈ اتھارٹی نے صوبے بھرمیں کریک ڈاون کا آغاز کر دیا،دودھ کمپنیوں کےخلاف وسیع پیمانے پر کارروائیاں شروع کر دی گئیں،عوام کو ناقص پانی سپلائی کرنے والے بھی بچ نہیں پائیں گے۔پنجاب فوڈ اتھارٹی مختلف اضلاع میں مضر صحت دودھ اور پانی سپلائی کرنے والے یونٹس کے خلاف کارروائیوں کےلیے ٹیمیں تشکیل دے چکی ہے۔ڈائریکٹر جنرل پنجاب فوڈ اتھارٹی نور الامین مینگل فیصل آباد ڈویڑن جبکہ ڈائریکٹرآپریشنز رافعہ جنوبی پنجاب کے اضلاع میں کارروائیوں کی نگرانی کریں گی، ٹیمیں دودھ کے نمونے حاصل کرکے لیب بھجوائیں گی جس کے بعدان کے مستقبل کا فیصلہ کیاجائے گا۔

پنجاب فوڈ اتھارٹی کے مطابق لاہور کے مختلف علاقوں میں دکانوں سے دودھ کے32نمونے اورپانی کے بھی 313 نمونے لیبارٹری بھجوائے گئے تھے۔پنجاب فوڈ اتھارٹی کے مطابق پی سی ایس آئی ارلیبارٹریزنےاب تک 52نمونوں کی رپورٹس دی ہیں جن میں سے27نمو نے ناقص اور غیرمعیاری پائے گئے۔ان واٹر یونٹس کی پروڈکشن بند کرکے3دن دیئے جائیں گے تاکہ وہ اپنا سسٹم درست کرلیں،اگر ان یونٹس نے اپنی حالت بہتر نہ کی تو انہیں سیل کردیا جائے گا۔پنجاب فوڈ اتھارٹی حکام کا کہنا ہے کہ کسی کو انسانی جانوں سے کھیلنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔