کراچی:  سانحہ بلدیہ کیس میں گرفتار ایک اور ملزم نے تحقیقات کے دوران سنسنی خیز انکشافات کردیئے۔

غلام علی عرف گولی کا کہنا ہے کہ فیکٹری جلانے کا منصوبہ بلدیہ سیکٹر آفس کے گراونڈ میں بنایا، عبدالرحمان بھولا کے ساتھ فیکٹری پہنچ کر دروازے بند کئے اور کیمیکل پھینک کر آگ لگائی، نہیں پتا تھا کتنے لوگ مارے گئے۔

سانحہ بلدیہ کے مرکزی کردار رحمان بھولا کے قریبی ساتھی غلام علی عرف گولی نے دوران تفتیش سنسنی خیز انکشافات کردیئے، کہتا ہے فیکٹری جلانے کا منصوبہ سیکٹر آفس کے گراونڈ میں بنایا، کالو ڈاڈا نے فون کرکے گراونڈ میں بلایا، بھولا کے ساتھ موٹر سائیکل اور ایک کار میں بلدیہ فیکٹری گئے۔

غلام علی کا مزید کہنا ہے کہ فیکٹری پہنچ کر دروازے بند کئے اور کیمکل پھینک کر آگ لگائی، رحمان بھولا، کالو ڈاڈا اور فریال کے ہاتھ میں کیمیکل کی تھیلیاں تھیں جبکہ کار سے کیمیکل کا ایک کین بھی نکال کر فیکٹری میں پھینک گیا، آگ لگانے کے وقت لڑکوں کے پاس اسلحہ بھی تھا.

مصنف کے بارے میں