اسرائیلی شہریوں کیلئے سعودی عرب کے دروازے کھلنے پر سعودی حکومت کاردعمل آگیا

اسرائیلی شہریوں کیلئے سعودی عرب کے دروازے کھلنے پر سعودی حکومت کاردعمل آگیا

ریاض: اسرائیلی شہریوں کیلئے سعودی عرب کے دروازے کھلنے کی خبروں پر سعودی حکومت کا باضابطہ ردعمل آگیا۔سعودی عرب کے وزیرخارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان نے کہا ہے کہ ایسے افراد جن کے پاس اسرائیلی پاسپورٹ ہوگا انہیں ان کے ملک میں خوش آمدید نہیں کہا جائے گا۔ 


امریکی ٹی وی سی این این کے مطابق سعودی وزیرخارجہ نے واضح کیا ہے کہ ان کی پالیسی طے شدہ ہے اور اسرائیل سے کوئی تعلقات نہیں ہیں موجودہ صورتحال میں اسرائیلی باشندے سعودی عرب میں نہیں آسکتے۔

شہزادہ فیصل بن فرحان نے کہافلسطینیوں اور اسرائیلیوں کے درمیان امن معاہدہ ہونے کے بعد ہی اسرائیل کو خطے کے امور میں شریک کرنے کا معاملہ زیرغور آسکتا ہے۔سعودی وزیر خارجہ کا بیان ان خبروں کے بعدآیاہے جن میں کہا گیا تھا کہ اسرائیل نے اپنے شہریوں کو مذہبی اور کاروباری مقاصد کیلئے سعودی عرب جانے کی اجازت دے دی ہے۔

اسرائیلی وزیر داخلہ الریح دیری نے اتوار کو اپنے شہریوں کے سعودی عرب جانے حکم نامے پر دست خط کردیئے تھے۔ان کے دفتر کی جانب سے جاری کردہ بیان کے مطابق ”اس اقدام کی سکیورٹی اور سفارتی خدمات کے محکموں کے ساتھ رابطے کے ذریعے منظوری دی گئی ہے۔اب مسلمان عازمین حج وعمرہ کو مذہبی مقاصدکیلئے سعودی عرب جانے کی اجازت ہوگی۔