قطر کی طرف سے دہشت گرد تنظیموں کی حمایت قبول نہیں ٗ سابق ڈائریکٹر سی آئی اے

قطر کی طرف سے دہشت گرد تنظیموں کی حمایت قبول نہیں ٗ سابق ڈائریکٹر سی آئی اے

واشنگٹن : سی آئی اے کے سابق ڈائریکٹر نے کہا ہے کہ قطر خطے میں ایک بڑا کھیل کھیل رہا ہے اور دہشت گردی تنظیموں کی حمایت کسی صورت قبول نہیں کی جائیگی


امریکی مرکزی انٹیلی جنس کے سابق نائب ڈائریکٹر مائیکل مورل نے باور کرایا ہے کہ امریکا کی جانب سے دہشت گرد تنظیمیں قرار دی جانے والی تحریکوں مثلا حماس، الاخوان المسلمین اور شام میں النصرہ فرنٹ کے لیے واضح اور کھلی سپورٹ سے ظاہر ہوتا ہے کہ دوحہ خطے میں ایک بڑا کھیل کھیل رہا ہے۔

برطانوی نشریاتی ادارے سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ قطر قدرتی گیس کی دولت سے مالامال کم آبادی والا ایک چھوٹا سا ملک اور وہ خطے میں بڑا کردار ادا کرنے کا خواہش مند ہے۔مورل نے واضح کیا کہ قطریوں نے ایسے مواقع تلاش کیے جو ان کو کچھ مختلف چیز پیش کرنے کے قابل بنا دے جس کے لیے انہوں نے دہشت گرد گروپوں سے رابطے بڑھائے اور ان کی سپورٹ کی۔

مورل کے مطابق قطر نے امریکا کی جانب سے دہشت گرد قرار دی جانے والی تنظیموں کو سپورٹ کیا اور حماس اور طالبان کے دوحہ میں سرکاری دفاتر بھی موجود ہیں۔جہاں تک الاخوان المسلمین کا تعلق ہے تو اس حوالے سے مورل نے باور کرایا کہ یقیناًیہ ایک سیاسی تنظیم ہے جو مشرق وسطی کے عوام کے واسطے ایک مخصوص طرز زندگی چاہتا ہے اور قطر اس جماعت کو سپورٹ کرتا ہے۔