امریکا نے بھارت سے وجہ بتائے بغیر اچانک مذاکرات ملتوی کردیے

08:05 PM, 28 Jun, 2018

واشنگٹن: امریکا نے بھارت سے اعلیٰ سطح کے مذاکرات وجہ بتائے بغیر اچانک ملتوی کردیے ، بھارتی میڈیا کے مطابق امریکا اور بھارت کے درمیان اعلیٰ سطح کے مذاکرات آئندہ ہفتے واشنگٹن میں طے تھے۔

امریکی وزیرخارجہ مائیک پومپیو نے بھارتی ہم منصب سشما سوراج کو فون کرکے اس حوالے سے آگاہ کردیا ہے ، مائیک پومپیو کا کہنا تھا کہ مذاکرات ناگزیر وجوہات کی بناء پر ملتوی کیے جارہے ہیں۔

یہ بھی پڑھیئے:میکسیکو : الیکشن مہم کے آغازسے لیکر اب تک 132 امیدوار قتل

اقوام متحدہ میں امریکی سفیر نے مذاکرات کے سلسلے میں بھارتی حکام سے ملاقاتیں کی تھیں ، مذاکرات کی منسوخی کے باوجود امریکا کا بھارت کو اگلی تاریخ فوری دینے سے انکار کردیا ہے۔

بھارتی میڈیا نے بتایا کہ بھارتی وزیر خارجہ اور وزیر دفاع کو اگلے ہفتےامریکی ہم منصبوں سے ملاقات کرنا تھی ، بھارت نے امریکی ٹیرف کے ردعمل میں 29 امریکی اشیاء پر اضافی ٹیرف کا اعلان کیا تھا۔

یہ بھی پڑھیئے:ریاض اور جیزان میں اچانک ریت کا طوفان ،لوگوں میں خوف و ہراس 
 
 خیال رہے کہ یہ دوسرا موقع ہے جب امریکا نے بھارت کے ساتھ مذاکرات ملتوی کیے۔ رواں سال مارچ میں بھی بھارت سے مذاکرات ملتوی کیے گئے تھے جب اس وقت کے سیکرٹری آف اسٹیٹ ریکس ٹیلرسن کو ان کے عہدے سے برخاست کردیا گیا تھا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق امریکا بھارت سے روس سے ایس-400 میزائل سسٹم اور ایران سے تیل خریدنے پر ناراض ہے ، اس کے علاوہ تجارتی معاملات میں بھی دونوں ممالک میں اختلافات پائے جاتے ہیں۔

بھارتی میڈیا کا یہ بھی کہنا ہے کہ بھارت امریکا ترجیحات میں شامل نہیں جس کا فوکس روس اور شمالی کوریا پر ہے ، بھارت سے مذاکرات ملتوی کرنے کی ایک ممکنہ وجہ 15 جولائی کی ٹرمپ-پیوٹن ملاقات ہوسکتی ہے جو ہیلیسینکی یا ویانا میں ہوگی۔
 

مزیدخبریں