نیب سمیت کرپشن کے سدباب کے لیے بنائے گئے اداروں نے قوم کو سخت مایوس کیا: سراج الحق

نیب سمیت کرپشن کے سدباب کے لیے بنائے گئے اداروں نے قوم کو سخت مایوس کیا: سراج الحق

لاہور: امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ ملک بھر میں اشیائے خوردو نوش کی قیمتوں میں اچانک اور بے تحاشا اضافے نے عوام کو پریشان کر دیاہے۔ مرغی کے گوشت ، سبزیوں اور پھلوں میں عوام دشمن اضافے کا رجحان مسلسل جاری ہے اور یوں لگتاہے کہ ملک میں مردم شماری کے ساتھ ہی مہنگائی بھی لوگوں کے گھروں میں گھس گئی ہے۔ عام استعمال کی چیزیں عوام کی پہنچ سے دور ہو گئی ہیں۔


ان خیالات کااظہار انہوں نے منصورہ میں اپنی صدارت میں منعقدہ مرکزی ذمہ داران کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ اجلاس میں سیکرٹری جنرل جماعت اسلامی لیاقت بلوچ ، نائب امر اء حافظ محمد ادریس ، راشد نسیم ، اسداللہ بھٹو ، میاں محمد اسلم ، پروفیسر محمد ابراہیم اور چاروں صوبائی امرائے اور ڈپٹی سیکرٹریز جنرل جماعت اسلامی پاکستان نے شرکت کی۔ 

ان کا کہنا تھا کہ کرپشن دیمک کی طرح قومی معیشت کو چاٹ رہی ہے ۔ نیب سمیت کرپشن کے سدباب کے لیے بنائے گئے اداروں نے قوم کو سخت مایوس کیاہے اور نیب کرپشن روکنے کی بجائے کرپٹ لوگوں کا سہولت کار بناہواہے ۔

سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ ایک ہفتے کے اندر مہنگائی کا ایسا طوفان اٹھ کھڑاہواہے کہ کچھ سجھائی نہیں د ے رہا ۔ متوسط اور غریب طبقے کی زندگی اجیرن ہو چکی ہے ۔ پہلے لوگوں کو تعلیم وصحت کی سہولتیں دستیاب نہیں تھیں ، اب دو وقت کا کھانابھی مشکل ہوچکاہے ۔ مہنگائی نے عام آدمی کو اپنے پنجوں میں بری طرح جکڑ لیاہے ۔

 سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ یہ ڈھٹائی کی انتہا ہے کہ حکمرانوں کے خلاف عدالتوں میں میگا کرپشن کے کیس چل رہے ہیں اور وہ جلسوں میں اپنی دیانتدار ی کے نعرے لگارہے ہیں ۔ حکمرانو ں نے ناجائزطریقے سے اربوں روپے کے اثاثے ملک سے باہر منتقل کیے ہیں ، قوم کا بچہ بچہ مقروض ہے ۔ حکمرانوں کی کرپشن کی وجہ سے دنیا بھر میں ایٹمی طاقت کے وقار کو دھچکا لگاہے اس صورتحال پر پوری قوم افسردہ اور اضطراب کی کیفیت میں ہے لیکن حکمران سب اچھا کی بانسری بجا رہے ہیں ۔

انہوں نے کہاکہ جماعت اسلامی نے ملک سے کرپشن کے خاتمہ کے لیے جس تحریک کا آغاز کیا تھا ، اسے منطقی انجام تک پہنچائیں گے او ر نوجوانوں کو ہراول دستہ بنا کر ملک بھر میں عوام کو کرپٹ حکمرانوں سے نجات کے لیے کھڑا کریں گے۔

انہوں نے جماعت اسلامی کے امرائے اضلاع پر زور دیا کہ وہ اپنے اپنے اضلاع میں موثر اور دیانتدار لوگو ں کو اپنا دست و بازو بنائیں اور نئے خون کو جماعت اسلامی میں شامل کرنے کے لیے مربوط حکمت عملی اختیار کریں۔

انہوں نے اس امید کا بھی اظہار کیاکہ 2018 ء کے انتخابات میں جماعت اسلامی ایک بڑی عوامی قوت بن کر سامنے آئے گی۔

نیوویب ڈیسک< News Source