سعودی دلہن کی ہونے والے شوہر سے ’’لیکسس‘‘ گاڑی کی فرمائش، دلہے کا شادی سے انکار

سعودی دلہن کی ہونے والے شوہر سے ’’لیکسس‘‘ گاڑی کی فرمائش، دلہے کا شادی سے انکار

ریاض: سعودی عرب میں شادیوں اور طلاقوں کے حوالے سے ہمیشہ ہی انوکھی ترین خبریں  سننے کوملتی ہیں ۔گزشتہ روز بھی شادی کے حؤالے سے انکوھی خبر سننے کو ملی جس میں سعودی دلہن کی جانب سے ہو نے والے شوہر سے ’’ لیکسس ‘‘ گاڑی کی فرمائش پر دلہانے شادی سے انکار کردیا ۔
میڈیا رپورٹس کے مطابق سعودی عرب میں خواتین کو ڈرائیونگ کی اجازت دینے کے تاریخی فیصلے کے بعد وہاں کی خواتین بے صبری سے ماہ جون کا انتظار کررہی ہیں جب اس فیصلے پر عمل درآمد شروع ہوگا اور اسی سلسلے میں خواتین نے اپنی من پسند گاڑیاں رکھنے کی تیاریاں بھی شروع کرلی ہیں، تاہم ایک دلہن کو لگژری گاڑی رکھنے کی فرمائش اس وقت کرنا مہنگی پڑگئی جب اس نے اپنے ہونے والے شوہر سے جہیز میں 5 لاکھ ریال (13 لاکھ 3 ہزار 300 ڈالر) مالیت کی لگژری گاڑی کی ڈیمانڈ کی، تاہم دلہا نے اپنی ہونے والی دلہن کی اس ڈیمانڈ کو رد کرتے ہوئے اس سے شادی کرنے کا ارادہ ترک کردیا۔
دلہا کا کہنا تھا کہ وہ خواتین کی ڈرائیونگ کے خلاف نہیں لیکن میں یہ ڈیمانڈ پوری نہیں کرسکتا۔ لڑکی کا ہاتھ مانگتے وقت اس کے خاندان والوں نے مجھے کہا تھا کہ انہیں کسی قسم کا جہیز نہیں چاہیے البتہ ان کی بیٹی کی صرف ایک فرمائش پوری کرنا ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ میں نے اس وقت وہ پوچھنے تک کی زحمت نہیں کی لیکن نکاح نامے پر دستخط کرنے سے قبل میں لڑکی کی ڈیمانڈ دیکھ کر حیران رہ گیا اور مجھے فوراً یہ فیصلہ لینا پڑا۔دوسری جانب لڑکی کے والد کا کہنا تھا کہ میں نے اپنی بیٹی کو کھلی چھٹی دے رکھی ہے کہ وہ جو چاہے جہیز میں فرمائش کر سکتی ہے۔