باکسنگ میں شکست، دل برداشتہ ماں نے رنگ میں ہی بیٹے کی پٹائی کردی

باکسنگ میں شکست، دل برداشتہ ماں نے رنگ میں ہی بیٹے کی پٹائی کردی

لندن:دنیا میں باکسنگ اور ریسلنگ کے عجیب وغریب تماشے ہوتے ہیں مگر روس میں باکسنگ کے ایک مقابلے کو اس وقت دلچسپ بنا دیا جب ایک 22 سالہ نوخیز باکسر کواس کے حریف سے مسلسل دو مرتبہ شکست کا سامنا کرنا پڑا تو اس کی ماں بیٹے کی شکست پردل برداشتہ ہو کررنگ میں داخل ہوگئی اورحریف باکسر کے ہاتھوں لہو لہان بیٹے کو تھپڑ رسید کردیے۔


عرب میڈیا کے مطابق ویڈیو شیرنگ کی ویب سائٹ یوٹیوب پر اس حیران کن واقعے کی ایک ویڈیو کو بڑے پیمانے پر دیکھا گیا ہے۔ فوٹیج میں دکھایا گیا ہے کہ 22 سالہ روسی Viktor Kichigin باکسر حریف کے ہاتھوں جب بری طرح شکست کھانے کے ساتھ ساتھ زخموں سے چور ہوگیا تو اس کی ماں اس کے ساتھ ہمدردی کے بجائے اس کی شکست پرسخت برہم ہوئی۔ یہاں تک کہ وہ باکسنگ رنگ میں داخل گئی اور شکست خوردہ بیٹے کے منہ پرتمانچے جڑ دیئے۔باکسنگ کا مقابلہ دیکھنے کے لیے موقع پرتین سو تماشائی موجود تھے۔

وکٹور کو اس کے حریف نے گرایا تو اس کی چیخ چیخ کر اسے اٹھو، اٹھو کہتی رہی مگر وہ بیچارہ نہ صرف ایک بار بلکہ ایک ہی باکسر Ruslan Yamanbae کے ہاتھوں مسلسل دو مرتبہ شکست کھانے کے بعد سخت شرمندہ تھا۔وکٹر کی ماں کے شوق باکسنگ کا اندازہ اس امر سے لگایا جاسکتا ہے کہ اس کے تین بیٹے باکسر ہیں۔ وکٹو کیچیجن ان میں سب سے چھوٹا ہے۔انا ازو فکسایا کی یوٹیوب پر کئی ویڈیوز موجود ہیں جن میں اسے باکسنگ کے مقابلوں کے موقع پر تماشائیوں میں کھلاڑیوں کا حوصلہ بڑھاتے دیکھا جاسکتا ہے۔

ایک ایسی ویڈیو ایک سال پہلے کے مقابلے کی جس میں اس کا باکسنگ میں کامیاب ہوا تو وہ چیخ چیخ کر اسے داد دینے لگی جس پر تماشائی بھی حیران تھے۔