اتحادی فوج میں امریکہ کی مداخلت، راحیل شریف کی 41 ملکوں کی سربراہی چھوڑ کر ملک واپسی پر غور

 اتحادی فوج میں امریکہ کی مداخلت، راحیل شریف کی 41 ملکوں کی سربراہی چھوڑ کر ملک واپسی پر غور

اسلام آباد :  پاکستان کے سابق آرمی چیف جنرل راحیل شریف آجکل سنجیدگی سے وطن واپسی پر غور کر رہے ہیں کہ اسلامی لشکر کے سپہ سالار کا عہدہ چھوڑ کر واپس پاکستان منتقل ہو جائیں ۔ذرائع کا کہنا ہے کہ راحیل شریف اتحادی فوج میں امریکہ کے غیر معمولی اثر ورسوخ  سے خوش نہیں ہیں۔ یہ اتحاد اس سمت میں گامزن نہیں ہوا  جو انہیں بتایا گیا تھا۔ اس کے علاوہ آہستہ آہستہ سعودی حکام ان کے رول کو محدود کر کے ایک سیکیورٹی آفیسر کی طرح کام لے رہے ہیں۔یہی وجہ ہے کہ یہ خبریں گردش کر رہی ہیں کہ پاکستان کے سب سے معتبر اور باصلاحیت سابق سپہ سالار نہایت سنجیدگی سے استعفیٰ دے کر پاکستان واپس آنے پر غور کر رہے ہیں۔


راحیل شریف کا 41 ملکوں کی سربراہی سے استفیٰ ، حیران کن نئے انکشافات سامنے آگئے

راحیل شریف کے قریبی دوستوں کا بھی یہی مشورہ ہے کہ راحیل شریف پاکستان واپس آکر پاکستان کیلئے بہت اہم کردار ادا کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں جس سے صحیح معنوں میں پاکستان اور امت مسلمہ کو بھر پور فائدہ ہو گا۔

راحیل شریف کے قریبی دوستوں کا بھی یہی مشورہ ہے کہ راحیل شریف پاکستان واپس آکر پاکستان کیلئے بہت اہم کردار ادا کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں جس سے صحیح معنوں میں پاکستان اور امت مسلمہ کو بھر پور فائدہ ہو گا۔

نیوویب ڈیسک< News Source