اکبر بگٹی قتل کیس،پرویز مشرف کے قابل ضمانت وارنٹ گرفتاری

 اکبر بگٹی قتل کیس،پرویز مشرف کے قابل ضمانت وارنٹ گرفتاری

کوئٹہ: بلوچستان ہائی کورٹ نے نواب اکبر بگٹی قتل کیس میں سابق صدر پرویز مشرف کے قابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کردئیے۔

بلوچستان ہائی کورٹ میں نواب اکبر بگٹی کیس کی سماعت جسٹس جمال خان مندوخیل اور جسٹس ظہیرالدین کاکڑ پرمشتمل بنچ نے کی،کیس میں نوابزادہ جمیل اکبر بگٹی نیسابق صدر مشرف و دیگر ملزمان کی بریت کو چیلنج کیاتھا، ہائی کورٹ نے سماعت کےبعد سابق صدر پرویز مشرف کے قابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کردیئے۔

ہائی کورٹ نے آئی جی،سیکریٹری داخلہ اور دیگر حکام کو سابق صدر کو ان کی آمد پر سکیورٹی فراہم کرنیکی بھی ہدایت کی۔اس سے قبل عدالت کے ریمارکس تھے کہ پرویز مشرف یہاں آکر تسلیم کر لیں، بلوچستانی بہت فراخ دل ہیں، معاف کر دینگے۔عدالت کے یہ بھی ریمارکس تھے کہ کیس کیمرکزی ملزم کو متعدد نوٹس بھجوائے، وہ پیش نہیں ہوئے،اس دوران وکیل پرویز مشرف اخترشاہ کا کہناتھا کہ ان کا موکل مفرورکی تعریف پر پورا نہیں اترتا۔

اس پر عدالت کے ریمارکس تھے کہ آپ ہمت کریں مشرف کے آنے کی یقین دہانی کرائیں۔پرویزمشرف کے آنے کی تاریخ اور سیکورٹی آپ کی مرضی کی ہوگی،اس پر اختر شاہ نے کہا کہ مجھے ایک ہفتے کی ملت دیں ،میں اپنے موکل سے پوچھ لوں کہ وہ کب آ سکتے ہیں،اس پر عدالت نے کہا کہ ہم وکلا کا احترام کرتے ہیں اس لئے آپ کو مہلت دی گئی ہے۔

بعد میں عدالت نے حکم دیا کہ پرویز مشرف کے وکلا جب تحریری طور پر لکھیں تب ان کی سیکورٹی کے انتظامات کئے جائیں،بعد میں کیس کی سماعت 21دسمبر تک کے لئے ملتوی کردی گئی۔

نیوویب ڈیسک< News Source