زاہد حامد کو سفیر بنائے جانے کا امکان

زاہد حامد کو سفیر بنائے جانے کا امکان

اسلام آباد: میڈیا رپورٹس کے مطابق سابق وزیر قانون زاہد حامد کی وزارت سے سبکدوشی کے بعد اعلیٰ سطح پر انہیں کسی اہم ملک میں سفیر بنائے جانے کا امکان ہے۔


سابق وزیر قانون زاہد حامد نے تشدد آمیز مظاہروں سے پہلے ہی وزیراعظم کو پیش کش کی تھی کہ وہ وزارت سے الگ ہو جاتے ہیں مگر کابینہ میں شامل بعض وزیروں نے ان کے مستعفی ہونےکی مخالفت کی اور مؤقف اختیار کیا کہ اس طرح ایک سلسلہ چل پڑے گا اور کوئی بھی گروپ سڑکوں کو بلاک کرکے مطالبہ کرے گا کہ فلاں وزیر استعفیٰ دے۔ زاہد حامد کی وزارت سے سبکدوشی کے بعد انہیں اعلیٰ سطح پر انہیں کسی اہم ملک میں سفیر بنائے جانے کا امکان ہے۔

حلف نامے میں تبدیلی کے حوالے سے راجہ ظفر الحق نے اپنی رپورٹ نوازشریف کو پیش کردی ہے جس میں دو وزرا کا مبہم انداز میں ذکر کیا گیا ہے تاہم کسی کو واضح ذمہ دار نہیں ٹھہرایا گیا ہے۔

واضح رہے کہ انتخابی ایکٹ بل میں ختم نبوت کے حلفے نامے میں تبدیلی کے بعد اسلام آباد میں مذہبی جماعت نے دھرنا دیا جو 21 روز جاری رہا اور دھرنے کے شرکا نے وزیر قانون زاہد حامد کے مستعفی ہونے کا مطالبہ کیا جس پر زاہد حامد نے استعفیٰ دیا تھا۔

 نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں