وزیر اعظم عمران خان اکتوبر میں چین کا دورہ کریں گے

 وزیر اعظم عمران خان اکتوبر میں چین کا دورہ کریں گے

اسلام آباد: وزیر اعظم عمران خان آئندہ ماہ اکتوبر کے وسط میں چین کا دورہ کریں گے، دورہ کی حتمی تاریخ اور دوسری تفصیلات کو حتمی شکل دی جارہی ہے۔چین کا دورہ عمران خان کا وزارت عظمی کا منصب سنبھالنے کے بعد دوسرا غیر ملکی دورہ ہو گا۔


حکومتی ذرائع کے مطابق عمران خان اکتوبر کے وسط میں چین کا دورہ کریں گے۔ دورہ میں وزیر اعظم کے ہمراہ اعلی سطحی وفد بھی چین جائے گا۔ تاحال یہ بات واضح نہیں کہ وزیراعظم کے ہمراہ جانے والے وفد میں کون کون شامل ہو گا۔پاکستانی وفد چین میں منعقد ہونے والی کانفرنس میں بھی شرکت کرے گا۔وزیراعظم اپنے دورہ کے دوران سی پیک کے منصوبوں میں تیزی لانے اور اور دو طرفہ معاشی تعاون پر بھی بات کریں گے۔دورہ چین میں چین کی قادت کے ساتھ اقتصادی شعبے میں تعاون بڑھانے کے موضوع پر بھی تبادلہ خیال کیا جائے گا۔

اقتدار سنبھالنے کے بعد وزیراعظم پاکستان عمران خان نے رواں ماہ کے وسط میں پہلا غیر ملکی دورہ سعودی عرب کا کیا تھا۔ دو روزہ دورہ کے دوران عمران خان متحدہ عرب امارات بھی گئے تھے۔وفاقی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی، وزیرخزانہ اسد عمر اور وزیراطلاعات فواد چوہدری بھی عمران خان کے ہمراہ گئے تھے۔وزیراعظم کی سعودی عرب کے دورہ کے دوران سعودی قیادت سے دونوں ملکوں کے درمیان دو طرفہ تعلقات بہتر بنانے پر بات چیت ہوئی تھی۔

عمران خان نے سعودی فرماں روا شاہ سلمان بن عبدالعزیز اور ولی عہد محمد بن سلمان کی دعوت پر سعودی عرب کا دورہ کیا تھا۔دورہ سے واپسی پر ذرائع ابلاغ سے گفتگو کرتے ہوئے وزیراطلاعات فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ سعودی عرب کو سی پیک میں اسٹریٹیجک پارٹنرشپ کی دعوت دی گئی ہے۔ جس کے تحت برادر اسلامی ملک مختلف منصوبوں میں اربوں ڈالر کی سرمایہ کاری کرے گا۔

وفاقی وزیرخزانہ اسد عمر نے بھی اپنے ایک بیان میں تصدیق کی تھیں کہ سعودی عرب مختلف منصوبوں پر سرمایہ کاری کرے گا تاہم ان کا کہنا تھا کہ ابھی سرمایہ کاری کی مقدار کا تعین نہیں کیا گیا ہے۔