چاڈ میں سونے کی کان بیٹھنے سے 52 افراد ہلاک ہو گئے

چاڈ میں سونے کی کان بیٹھنے سے 52 افراد ہلاک ہو گئے
حکومتی اہلکاروں نے حادثے میں 30 افراد کی ہلاکت کا شبہ ظاہر کیا ہے۔۔۔۔۔فوٹو/ بشکریہ مائنگ ڈاٹ کام

چاڈ: افریقی ملک چاڈ میں سونے کی کان بیٹھنے سے 52 افراد ہلاک ہو گئے۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق سونے کی کان بیٹھنے کا واقعہ لیبیا کی سرحد کے قریب تبیستی صوبے میں کوری بوگودی کے علاقے میں پیش آیا۔


میڈیا رپوٹس کے مطابق کان بیٹھنے کے واقعے میں 52 افراد ہلاک ہوئے جب کہ حکومتی اہلکاروں نے حادثے میں 30 افراد کی ہلاکت کا شبہ ظاہر کیا ہے۔

رپورٹس کے مطابق حادثے میں 37 افراد زخمی بھی ہوئے جن میں سے 21 افراد کی حالت تشویشناک ہے۔

سیکیورٹی اور مائننگ سے تعلق رکھنے والے ایک ذرائع کا کہنا ہے کہ رواں برس جنوری میں لیبیا سے تعلق رکھنے والے عرب کان کنوں اور چاڈ کے آوڈئی کمیونٹی کے افراد کے درمیان فسادات میں درجنوں افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

کوری بوگودی کا علاقہ 2012، 2013 میں سونے کی دریافت کے بعد سے مقامی، لسانی اور غیر ملکی گروپوں کے درمیان لڑائی کا مرکز بنا ہوا ہے۔