اوئے! نواز شریف تمھارے کہنے پر استعفیٰ دے گا؟

اوکاڑہ : وزیر اعظم نواز شریف نے اوکاڑہ جلسے میں اپنے مخالفین کی دھجیاں بکھیر دیں، انہوں نے کہا کہ احتجاج کرنے والے احتجاج کرتے رہ جائیں گئے، ہر بات پر کہتے ہیں ، نواز شریف استعفیٰ دو۔اوئے! نواز شریف تمھارے کہنے پر استعفیٰ دے گا؟

اوئے! نواز شریف تمھارے کہنے پر استعفیٰ دے گا؟

اوکاڑہ : وزیر اعظم نواز شریف نے اوکاڑہ جلسے میں اپنے مخالفین کی دھجیاں بکھیر دیں، انہوں نے کہا کہ احتجاج کرنے والے احتجاج کرتے رہ جائیں گئے، ہر بات پر کہتے ہیں ، نواز شریف استعفیٰ دو۔اوئے! نواز شریف تمھارے کہنے پر استعفیٰ دے گا؟


اوکاڑہ میں مسلم لیگ کے جلسے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نے مخالفین کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ جاو¿ جا کہ کرکٹ کھیلوں ، کرکٹ ہم نے بھی کھیلی ہے، پر جتنی کرکٹ کھیلنی تھی کھیل لی۔ ان کا کہنا تھا کہ ’مخالفین چھوٹی چھوٹی جلسیاں کر رہے ہیں، ان جلسیوں اور اس جلسے میں زمین و آسمان کا فرق ہے، لوڈ شیڈنگ کی وجہ بننے والے لوڈ شیڈنگ کی بات کر رہے ہیں، لیکن ہر ماہ ملک میں بجلی کا نیا کارخانہ تیار ہو رہا ہے، 2018 میں لوڈشیڈنگ کا مکمل خاتمہ کردیا جائے گا ۔

وزیر اعظم نواز شریف نے کہا کہ ’نواز شریف وعدہ کرکے بھولتا نہیں، میں نے 2013 میں کہا تھا اوکاڑہ سے موٹروے گزرے گی، مجھے اپنا وعدہ یاد ہے جس کی میں آج تجدید کرنے آیا ہوں، اوکاڑہ سے موٹروے ضرور گزرے گی، جبکہ موٹروے سے منسلک ہونے کے بعد اوکاڑہ کے وارے نیارے ہوجائیں گے۔‘انہوں نے کہا کہ ’آج اوکاڑہ والوں کیلئے سوئی گیس لائنوں کی بنیاد رکھ دی ہے،