محکمہ صحت کی نااہلی، 12 افراد کی بینائی ضائع ہونے پر اسپتال کو صرف 5 لاکھ روپے جرمانہ

محکمہ صحت کی نااہلی، 12 افراد کی بینائی ضائع ہونے پر اسپتال کو صرف 5 لاکھ روپے جرمانہ
کیپشن:   محکمہ صحت کی نااہلی، 12 افراد کی بینائی ضائع ہونے پر اسپتال کو صرف 5 لاکھ روپے جرمانہ سورس:   فائل فوٹو

ملتان: پنجاب ہیلتھ کیئر کمیشن نے نجی لئیق رفیق اسپتال کے میڈیکل کیمپ میں غلط سرجری کے باعث 12 افراد کی بینائی ضائع ہونے کی تحقیقات مکمل کر لیں۔

تفصیلات کے مطابق آنکھوں کے غلط آپریشنز پر لئیق رفیق ہسپتال کو5 لاکھ روپے جرمانہ عائد کردیا گیا جبکہ آپریشن کرنے والے ڈاکٹر کا کیس پاکستان میڈیکل کمیشن اورمحکمہ صحت کو بھجوا دیا گیا۔

ترجمان پنجاب ہیلتھ کیئر کمیشن کے مطابق ڈاکٹر حسنین کے خلاف فوجداری کارروائی کی تجویز دی گئی ہے اور مقدمے کا فیصلہ متاثرین پر چھوڑ دیا گیا ہے کہ وہ ڈاکٹر کے خلاف اندراجِ مقدمہ کے لیے پولیس کودرخواست دے سکتے ہیں۔

لئیق رفیق ہسپتال ملتان میں گزشتہ ماہ 16 افراد کی آنکھوں کے آپریشنز کیے گئے تھے مگر دو روز بعد ہی 12 اشخاص کو شدید انفیکشن ہو گیا اور بعدازاں انکی بینائی جاتی رہی۔

مبینہ غفلت پر ابتدائی کارروائی کر تے ہوئے کمیشن کی چار رکنی ٹیم نے نجی ہسپتال کے آپریشن تھیٹرزسربمہرکر کے علاج معالجہ کی تفصیلات حاصل کرنے کے ساتھ ساتھ تمام ریکارڈ قبضہ میں لے لیا تھا۔