پی آئی اے کا خزانے کو 47 ارب 3 کروڑ روپے نقصان پہنچانے کا انکشاف

پی آئی اے کا خزانے کو 47 ارب 3 کروڑ روپے نقصان پہنچانے کا انکشاف

اسلام آباد: پاکستان انٹرنیشنل ائر لائنز کارپوریشن کی جانب سے قومی خزانے کو 47 ارب 3 کروڑ 66 لاکھ 17 ہزار روپے نقصان پہنچائے جانے کا انکشاف ہوا ہے۔ قومی ائر لائن کو تباہی کے دہانے پر پہنچانے کیلئے افسروں اور ملازمین سب نے ہی بہتی گنگا میں ہاتھ دھوئے۔ آڈیٹر جنرل کی 17۔ 2016 کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ طیاروں کے انجنوں کی مرمت کی مد میں غیر ضروری اخراجات کیوجہ سے ادارے کو 37 ارب 15 کروڑ 6 لاکھ 98 ہزار کا نقصان ہوا۔ اسی طرح ائرلائنز کے غیر موثر معاہدوں کے نتیجے میں ادارے نے 4 ارب 7 کروڑ 36 لاکھ 50 ہزار کا نقصان برداشت کیا۔


کیٹرنگ کے معاہدوں میں 2 ارب 57 کروڑ 89 لاکھ 7 ہزار۔ سرکاری اداروں سے عدم وصولی کی مد میں 96 کروڑ 3 لاکھ 70 ہزار روپے۔ بین الاقوامی سروس پروائیڈر گلیلیو انٹرنیشنل کی وجہ سے ادارے کو 61 کروڑ 20 لاکھ 40 ہزار، غیر قانونی تقرری، تعیناتیوں اور تبادلوں سے ادارے کو 30 کروڑ کا نقصان برداشت کرنا پڑا۔ پارٹس کی مرمت اور خریداری سے ادارے کو 20 کروڑ 98 لاکھ 26 ہزار کا نقصان ہوا۔

کراچی، لاہور سیکٹر کے کاموں میں ناقص پلاننگ کی وجہ سے 12 کروڑ 49 لاکھ 81 ہزار، ادارے میں ضرورت سے زیادہ ملازمین رکھنے سے 4 کروڑ 62 لاکھ، غیر ضروری لائسنسگ کی مد میں 12 کروڑ 88 لاکھ 4 ہزار، ملازمین کی بھرتیوں سے ادارے کو 12 کروڑ 46 لاکھ 43 ہزار، مرغیوں اور دیگر چیزوں کی خریداری کے غیر تصدیق شدہ معاہدے کے کنٹریکٹ میں 11 کروڑ 46 لاکھ 15 ہزار کا نقصان پہنچایا گیا۔ کھانوں کی پیکنگ میں زیادہ قیمتیں لینے پر 1 کروڑ 25 لاکھ 1 ہزار اور 52 لاکھ 63 ہزار نقصان برداشت کرنا پڑا۔

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں