ملک میں عدم استحکام کا فائدہ دشمنوں کو ہو گا، احسن اقبال

کوئٹہ: دہشتگردی کا شکار میتھوڈسٹ چرچ کے دورے کے موقع پر وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال نے کہا کہ فرار عسکریت پسند مغربی سرحد سے دوبارہ پاکستان میں داخل ہو کر دہشتگردی کر رہے ہیں. گزشتہ 4 سال کے دوران دہشتگردوں کی کمرتوڑ دی ہے تاہم دہشت گردی کے خلاف جنگ اب بھی جاری ہے اور سیاسی جماعتوں کو پیغام دیتا ہوں کہ ملک میں عدم استحکام کا فائدہ دشمنوں کو ہو گا جبکہ یہ وقت ٹانگیں کھینچنے کا نہیں ہے۔

شریف برادران کے دورہ سعودی عرب سے متعلق سوال کے جواب میں احسن اقبال نے کہا کہ ہر کسی کو سعودی عرب جانے کی آزادی حاصل ہے اور ضروری نہیں کہ وہاں جا کر ہر کوئی سیاست کرے جبکہ ہر کوئی وہاں جاتا ہے اور میں بھی ایک ہفتہ پہلے عمرہ کر کے آیا ہوں اکثر کوئی نہ کوئی ایم این اے ، ایم پی اے یا وزیر سعودی عرب کے دورے پر ہوتا ہے۔

ترجمان پاک فوج کی جانب سے وزیر ریلوے کے بیان کو غیر ذمہ دارانہ قرار دینے کے حوالے سے وزیر داخلہ نے کہا کہ ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور کے بیان پر سعد رفیق کی وضاحت کے بعد معاملہ ختم ہو گیا ہے۔

احسن اقبال کا کہنا تھا کہ دشمن بلوچستان میں کارروائیاں کر کے پاکستان کو عدم استحکام کا شکار کرنا چاہتا ہے اور دھرنے یا انتشار کی سیاست کا فائدہ دہشتگردوں کو ہو گا جو بے یقینی پیدا کرنا چاہتے ہیں۔ دہشت گردی کا مقصد سی پیک منصوبے کو ناکام بنانا ہے اور دہشت گرد کسی مذہب کے نہیں بلکہ انسانیت کے دشمن ہیں۔

اس موقع پر وزیر مذہبی امور سردار یوسف نے کہا کہ چرچ کو بحال کریں گے اور زخمیوں کے بہترین علاج کیلیے ہدایات بھی دی ہیں جبکہ واقعے کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے۔

 

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں