مسئلہ کشمیر برصغیر کی تقسیم کا نامکمل ایجنڈا ہے جس کو پورا کرنا برطانوی حکومت کی ذمہ داری ہے، سینیٹرسراج الحق

مسئلہ کشمیر برصغیر کی تقسیم کا نامکمل ایجنڈا ہے جس کو پورا کرنا برطانوی حکومت کی ذمہ داری ہے، سینیٹرسراج الحق

لندن: امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹرسراج الحق نے لندن میں پاکستانی ہائی کمیشن کا دورہ کیا اور ہائی کمشنر سیدابن عباس سے ملاقات کی۔ ملاقات میں برطانیہ میں مقیم پاکستانیوں کو درپیش مسائل اور باہمی دلچسپی کے امور پر گفتگو  ہوئی۔

ملاقات کے بعد سینیٹر سراج الحق نے سیدابن عباس کے ہمراہ میڈیا سے گفتگو   کرتے ہوئے برطانوی حکومت سے مطالبہ کیاکہ وہ مسئلہ کشمیر کے فوری حل کے لیے عالمی برادری میں اپنا اثرو رسوخ استعمال کرے۔ مسئلہ کشمیر برصغیر کی تقسیم کا نامکمل ایجنڈا ہے جس کو پورا کرنا برطانوی حکومت کی ذمہ داری ہے۔ بھارت اور پاکستان کے درمیان مسئلہ کشمیر پر تین جنگیں ہوچکی ہیں اگر آئندہ دونوں ملکوں کے درمیان اس مسئلہ پر جنگ چھڑتی ہے تو وہ ناصر ف برصغیر بلکہ پوری دنیا کے لیے تباہ کن ہوسکتی ہے ۔ پاکستان اور بھارت دونوں ایٹمی قوتیں ہیں ، اس تباہی سے بچنے کے لیے عالمی برادری کو مسئلہ کشمیر کے حل کی طرف فوری توجہ دینا ہو  گی۔

سینیٹر سراج الحق نے کہا  کہ بھارت پاکستان میں دہشتگردی اورتخریب کاری کروا رہاہے اور دنیا بھر میں پاکستان کے خلاف ہونے والی سازشوں کی سرپرستی کررہاہے۔ انہوں نے کہا  کہ تنازع کشمیر کو وہاں کے عوام کی مرضی اور اقوام متحدہ کی قرار دادوں کی روشنی میں حل کروانے میں برطانیہ اہم کردار ادا کرسکتاہے۔ انہوں نے کہا  کہ ہمارا  واسطہ ایک مکار پڑوسی سے پڑاہے جس نے آج تک پاکستان کو تسلیم کیا اور نہ پاکستان کے وجود کو برداشت کرنے کے لیے تیار ہے۔

سینیٹر سراج الحق نے کہا  کہ آئین و قانون اور میرٹ کی بالادستی کے بغیر ملک ترقی نہیں کر سکتا۔ انہوں نے کہا  کہ افراد اور خاندانوں کے گرد گھومنے والی سیاست میں عوام کے مسائل حل نہیں ہوسکتے ، ملک میں دیانتدار اور باصلاحیت افراد کی کمی نہیں، عوام آئندہ انتخابات میں بار بار آزمائے ہوؤں کو آزمانے کی بجائے صاف ستھرے کردار کے حامل لوگوں کا انتخاب کریں۔

سینیٹر سراج الحق نے مطالبہ کیا  کہ آئندہ انتخابات میں اوورسیز   پاکستانیو ں کو بھی ووٹ کا حق دیا جائے اوورسیز   پاکستانی سالانہ بیس ارب ڈالر کے قریب زر مبادلہ پاکستان بجھواتے ہیں۔ برطانیہ میں بارہ لاکھ سے زائد پاکستانی شہری مقیم ہیں اتنی بڑی تعداد میں لوگوں کو  قومی قیادت کے انتخاب میں رائے دہی اور ملکی معاملات سے دور رکھناکسی طرح بھی قابل قبول نہیں۔

ملاقات کے موقع پر ڈپٹی سیکرٹری جنرل جماعت اسلامی محمد اصغر ، سید شوکت علی ، یوکے اسلامک مشن کے جنرل سیکرٹری ریاض ولی اور فیصل شاہ بھی موجود تھے۔ دریں اثنا سینیٹر سراج الحق نے برمنگھم کے اسلامک سینٹر سپارک بروک میں نماز جمعہ کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا  کہ اوورسیز پاکستانی بیرونی دنیا میں پاکستان کے بہترین سفیر ہیں۔ انہیں اپنے کردار سے ثابت کرنا ہے کہ وہ دنیا کے مہذب ترین انسان ہیں اور پاکستانی تہذیت و تمدن دنیا بھر میں اپنی ایک منفرد پہچان رکھتی ہے۔

انہوں نے کہا  کہ اسلام امن و محبت اور باہمی احترام کا درس دیتاہے۔ اسلام عالمی امن کا سب سے بڑا داعی ہے۔ انہوں نے کہا  کہ بیرون ملک مقیم پاکستانی ملک و قوم کے عزت و وقار کے محافظ  ہیں انہیں مسئلہ کشمیر اور فلسطین کے حوالے سے عالمی برادری کو   آ  گاہ کرنا چاہیے۔جمعہ کے اجتماع میں سینکڑوں لوگوں نے شرکت کی۔

مصنف کے بارے میں