پی ایس ایکس میں مندی کا رجحان، انڈیکس 93.83 پوائنٹس کی کمی سے 44457.30 پوائنٹس پر بند

پی ایس ایکس میں مندی کا رجحان، انڈیکس 93.83 پوائنٹس کی کمی سے 44457.30 پوائنٹس پر بند

کراچی: پاکستان اسٹاک ایکسچینج (پی ایس ایکس) میں مندی کا رجحان رہا، کے ایس ای 100 انڈیکس 93.83 پوائنٹس کی کمی سے 44457.30 پوائنٹس پر بند ہوا، مارکیٹ سرمایہ میں 35 ارب 55 کروڑ 74 لاکھ 82 ہزار 648 روپے کی کمی رہی جبکہ تجارتی حجم میں بھی 1 ارب 12 کروڑ 58 لاکھ 89 ہزار 849 روپے کی مندی رونماء ہوئی۔ اسی طرح خرید و فروخت میں 7 کروڑ 84 لاکھ 22 ہزار 400 حصص کی کمی ریکارڈ کی گئی۔


تفصیلات کے مطابق نئے کاروباری ہفتے کے آغاز پر پیر کو پی ایس ایکس میں مندی کا رجحان رہا اورکے ایس ای 100 انڈیکس 93.83 پوائنٹس کی کمی سے 44457.30 پوائنٹس پر بند ہوا جبکہ کے ایس ای 30 انڈیکس بھی 99.09 پوائنٹس کی مندی سے 22335.04 پوائنٹس پر بند ہوا۔ مزیدبرآں کے ایس سی آل شیئر انڈیکس میں 117.60 پوائنٹس کی کمی رونماء ہوئی جبکہ کے ایم آئی 30 انڈیکس میں 810.95 پوائنٹس کی مندی ریکارڈ کی گئی۔

دریں اثناء بینکس ٹریڈ ایبل (بی اے ٹی آئی) انڈیکس 360.59 پوائنٹس کے اضافے سے 17629.68 پوائنٹس پر بند ہوا تاہم آئل اینڈ گیس ٹریڈ ایبل (او جی ٹی آئی) انڈیکس 168.86 پوائنٹس کی کمی سے 19978.68 پوائنٹس پر بند ہوا۔ پی ایس ایکس - کے ایم آئی انڈیکس 185.44 پوائنٹس کی مندی سے 21805.77 پوائنٹس پر بند ہوا۔ مارکیٹ میں مجموعی طور پر 377 کمپنیوں کے حصص کا لین دین ہوا جن میں سے 152 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں تیزی، 208 کمپنیوں کے حصص کے بھاؤ میں مندی اور 17 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں استحکام رہا۔ سب سے زیادہ تیزی یونی لیور فوڈز کے حصص کی قیمت میں ہوئی جس کے حصص کی قیمت 100 روپے کے اضافے سے 8000 روپے پر بند ہوئی۔ اسی طرح گندھارا انڈسٹری کے حصص کی سودے بھی 28.94 روپے کی تیزی سے 607.80 روپے پر بند ہوئے۔

سب سے زیادہ مندی نیسلے پاکستان اور باٹا (پاک) کے حصص کی قیمتوں میں ہوئی۔ نیسلے پاکستان کے حصص کی قیمت 250 روپے کی مندی سے 11600 روپے اور باٹا (پاک) کے حصص کی قیمت بھی 97 روپے کی کمی سے 2403 روپے رہ گئی۔ سب سے زیادہ کاروبار دیوان سیمنٹ کے حصص میں ہوا جو 2 کروڑ 37 لاکھ 4 ہزار شیئرز رہا جس کی قیمت 22.50 روپے سے شروع ہو کر 24.41 روپے پر بند ہوئی جبکہ بینک آف پنجاب کے 2 کروڑ 33 لاکھ 41 ہزار حصص کے سودے 10.20 روپے سے شروع ہو کر 10.31 روپے پر بند ہوئے۔

مجموعی طور پر 19 کروڑ 23 لاکھ 33 ہزار 270 حصص کا کاروبار ہوا جس کا تجارتی حجم 8 ارب 5 کروڑ 3 لاکھ 93 ہزار 368 روپے رہا۔ مارکیٹ کیپیٹل 92 کھرب 17 ارب 77 کروڑ 30 لاکھ 61 ہزار 563 روپے سے کم ہو کر 91 کھرب 82 ارب 21 کروڑ 55 لاکھ 78 ہزار 915 روپے رہ گیا۔ فیوچر ٹریڈنگ میں 106 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں تیزی، 26 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں مندی اور 4 کمپنیوں کے حصص کی قیمت میں استحکام رہا جبکہ 3 کروڑ 11 لاکھ 13 ہزار 112 حصص کا کاروبار ہوا۔